بارشیں : نالہ بئیں میں طغیانی چار افراد ڈوب گئے کرک میں چھت گرنے سے پانچ جاں بحق

11 جولائی 2015

لاہور + کرک + نارووال + چک امرو (نامہ نگاران + نوائے وقت نیوز + ایجنسیاں) لاہور، اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف علاقوں میں گزشتہ روز بھی بارش ہوئی جس سے نشیبی علاقے زیر آب آگئے۔ کرک میں بارش کے باعث مکان کی چھت گرنے سے 3 بچوں سمیت 5 افراد جاں بحق اور 2 زخمی ہوگئے۔ نالہ بئیں میں طغیانی سے 4 افراد ڈوب گئے، ایک کی نعش کو نکال لیا گیا۔ محکمہ موسمیات نے اسلام آباد سمیت پنجاب، خیبرپی کے اور کشمیر میں مزید بارشوں کی پیشگوئی کی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق رمضان کے آخری ہفتے اور عیدالفطر کے موقع پر بھی بارش کا امکان ہے۔ تفصیلات کے مطابق لاہور میں صبح سویرے گھنگھور گھٹائیں چھا گئیں۔ ٹھنڈی ہوا کے ساتھ کہیں رِم جھم اور کہیں بوندا باندی ہوئی جس نے موسم نہایت دلکش بنا دیا۔ گوجرانوالہ میں بھی تیز ہوائیں اپنے ساتھ بادل لے آئیں، کالے بادل خوب گرجے اور چھما چھم برسے۔ اسلام آباد اور راولپنڈی میں رات گئے برسنے والے تیز بارش نے جل تھل ایک کردیا۔ قصور، ڈسکہ، سیالکوٹ، میانوالی، کندیاں، مالاکنڈ میں بھی تیز بارش ہوئی۔ ادھر کرک کے علاقے بہادر خیل میں بارش کے باعث مکان کی چھت گرنے سے 5 افراد جاں بحق اور دو زخمی ہوگئے۔ مرنے والوں میں 3 بچے بھی شامل ہیں۔ پولیس کے مطابق مرنے والے اور زخمی ایک ہی گھر کے افراد ہیں۔ چک امرو سے نامہ نگار کے مطابق بھارت سے آنے والے نالہ بئیں کے ریلے میں 4 افراد ڈوب گئے جن میں 22 سالہ جاوید کی نعش برآمد کرلی گئی ہے۔ گزشتہ روز دوپہر کے وقت نورکوٹ کے نواحی موضع مدن کا رہائشی کمسن طالب علم عبداللہ نالہ بئیں کے کنارے مویشی چرا رہا تھا کہ اچانک تیز پانی کے ریلے نے آلیا اور وہ اس میں بہہ گیا جبکہ نالہ بئیں کے پل پر موٹر سائیکل رکشہ فتح پور کی جانب جارہا تھا رکشہ زیر تعمیر کچی سڑک پر اچانک پانی میں پھنس گیا جس کو بچانے کے لئے پل پر کھڑا شکرگڑھ کا رہائشی نوجوان جاوید بھاگا۔ رکشہ میں سوار ایک شخص کو باہر کھینچتے ہوئے خود پھسل کر لہروں کی نذر ہوگیا جس کی نعش 4 گھنٹے بعد ریسکیو نے نکالی لی۔ دریائے چناب میں نچلے درجے کا سیلاب ہے۔ 17 دیہات کو وارننگ جاری کردی گئی ہے۔ ظفروال سے نامہ نگار کے مطابق نالہ ڈیک میں طغیانی سے دیولی کے مقام سے بند ٹوٹ گیا۔ 25 فٹ سے زائد کا شگاف پڑنے سے درجنوں دیہات زیر آب آگئے۔ مویشیوں کے لئے چارے کی فصلیں تباہ ہوگئیں۔ نوائے وقت نیوز کے مطابق آزاد کشمیر کے شہر کوٹلی میں گاڑی برساتی نالہ عبور کرتے ہوئے پانی میں بہہ گئی۔ دو بھائی ڈوب کر لاپتہ ہوگئے۔ پولیس کے مطابق کوٹلی کے علاقے تتہ پانی میں برساتی نالہ عبور کرتے ہوئے گاڑی خراب ہوگئی جو پانی کے تیز بہاﺅ کی وجہ سے بہہ گئی۔گاڑی میں سوار دو بھائیوں سمیت 5 افراد ڈوب گئے جن میں سے تین افراد بچنے میں کامیاب ہوگئے جبکہ دونوں بھائی ڈوب کر لاپتہ ہوگئے۔ ہیڈ مرالہ سے نامہ نگار کے مطابق ہیڈ مرالہ کے مقام دریائے چناب میں درمیانے درجے کا سیلاب ہے، پانی کا بہاﺅ ایک لاکھ پچاس ہزارکیوسک سے تجاوزکرگیا جبکہ پانی کی مقدار میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ ادھر تحصیل بحرین، سوات کے علاقے اسریت میں 3 جگہ لینڈ سلائیڈنگ ہوئی، کالام اور مینگوڑہ روڈ لینڈ سلائیڈنگ سے بند ہوگئی جس سے سینکڑوں سیاح اور گاڑیاں پھنس گئیں۔ نارووال سے نامہ نگار کے مطابق برساتی نالہ ڈیک میں شدید طغیانی سے کئی دیہات زیر آب آگئے ،چھ دیہاتوں سے زمینی رابطہ منقطع ہوگیا، سینکڑوں ایکڑاراضی پر کھڑی فصل سیلاب میں دب گئی۔ نالہ بئیں میں ڈوبنے والوں میں محمد جاوید، محمد عبداللہ اور محمد خلیل شامل ہیں۔ اے پی پی کے مطابق ضلع صوابی کی تحصیل رزڑ میں طوفانی بارش نے تباہی مچادی۔ ندی نالوں میں طغیانی سے سیلابی پانی گھروں اور دکانوں میں داخل ہوگیا، لوگوں نے چھتوں پر پناہ لے رکھی ہے جبکہ کھڑی فصلیں تباہ ہوگئیں۔ درجنوں مویشی سیلابی پانی میں بہہ گئے۔ بنگزارہ کرنل شیر کلے، اسماعیلہ، آدینہ و دیگر مضافات کے علاوہ سیلابی خوڑ کے کنارے آباد کچے مکانات گرنے کے علاوہ دکانوں میں پانی داخل ہوجانے سے اشیائے خورو نوش کی چیزیں اور املاک پانی میں بہہ گئیں۔ درخت جڑوں سے اکھڑ گئے اسی طرح بجلی کے کھمبے بھی گر گئے جس کی وجہ سے بجلی کی سپلائی مکمل طور پر منقطع رہی۔ علاوہ ازیں محکمہ موسمیات نے رمضان کے آخری ہفتے کے دوران اور عید کے روز بھی بارش ہونے کی پیش گوئی کی ہے۔ چیف میٹرولوجسٹ ڈاکٹر محمد حنیف نے کہا ہے کہ ماہ رواں میں مزید بارشوں کے امکانات ہیں۔ آج ہفتے کو بھی راولپنڈی اسلام آباد میں مزید بارش ہونے کی توقع ہے۔ ادھر کرک کے علاقے گل بانڈہ میں طوفانی بارشوں نے تباہی مچا دی بچوں اور خواتین سمیت 15 سے زائد افراد زخمی ہوگئے جبکہ 14 سے زائد گھر منہدم ہوگئے۔
بارشیں / 4 افراد ڈوب گئے