عمران فاروق کو قتل کرنے کے احکامات انیس قائم خانی کے ذریعے ملے: معظم

11 جولائی 2015

کراچی (نوائے وقت رپورٹ) عمران فاروق قتل کیس کے ملزم معظم علی خان نے انکشاف کیا ہے کہ خالد شمیم نے 2007ءمیں بند لفافہ الطاف حسین کو پہنچانے کیلئے دیا۔ لفافے میں فاروق ستار، عمران فاروق، محمد انور کی کرپشن رپورٹ تھی۔ کرپشن رپورٹ میں انیس قائم خانی اور شکیل عمر کے نام بھی تھے۔ خالد شمیم کا پیغام دیا کہ عمران فاروق اپنی پارٹی بنا رہے ہیں۔ محسن نے عمران فاروق کی ریکی مکمل کرنے کا بتایا۔ عمران فاروق کیلئے ماموں کا کوڈ ورڈ طے ہوا جبکہ قتل کیلئے کیک کاٹنے کا کوڈ رکھا گیا۔ الطاف حسین نے 100 روپے کے نوٹ پر اپنا آٹوگراف دیا تھا۔ خالد شمیم نے محسن اور کاشف کو کراچی ائرپورٹ سے لینے کا کہا۔ محسن اور کاشف باہر نہیں آئے تو گھر واپس چلا گیا۔ عمران فاروق قتل کے بارے میں سات افراد کو علم تھا۔ قتل کے احکامات انیس قائم خانی کے ذریعے ملے۔
معظم