چیف جسٹس پاکستان نے پنجاب میں پولیس مقابلوں کا ازخود نوٹس لے لیا

11 فروری 2018 (14:29)
چیف جسٹس پاکستان نے پنجاب میں پولیس مقابلوں کا ازخود نوٹس لے لیا

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے پنجاب میں پولیس مقابلوں کا ازخود نوٹس لے لیا جبکہ پاکستان تحریک انصاف نے جعلی مقابلوں کے مقدمے میں فریق بننے کا اعلان کیا ہے۔اتوار کوسپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں صاف پانی کی عدم فراہمی اور سڑکوں کی بندش سے متعلق از خود نوٹس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے پنجاب میں پولیس مقابلوں کا بھی از خود نوٹس لیا۔چیف جسٹس نے آئی جی پنجاب کو حکم دیا کہ وہ تمام پولیس مقابلوں کی رپورٹ عدالت میں ایک ہفتے میں پیش کریں اور بتائیں کہ مقابلوں کے دوران کتنے بندے مارے گئے ہیں۔ چیف جسٹس پاکستان نے چیف سیکرٹری سے بھی ایک سال میں ہونے والے پولیس مقابلوں کی تفصیلات طلب کرلیں۔ سیکرٹری داخلہ نے رپورٹ کے لئے دس روز مانگے تو چیف جسٹس نے 10روز کی مہلت کی استدعا مسترد کرتے ہوئے ایک ہفتے میں رپورٹ طلب کرلی۔ادھر تحریک انصاف نے پنجاب میں جعلی پولیس مقابلوں پر چیف جسٹس کے نوٹس کا خیر مقدم کیا ہے۔ پی ٹی آئی کے رہنما فواد چوہدری نے کہا کہ شہباز شریف کے ایما پر جعلی پولیس مقابلوں کا ریکارڈ بہت خوفناک ہے، پنجاب میں ایسے پولیس مقابلوں کا کوئی شمار ہی نہیں، صرف قصور میں 137 لوگوں کو جعلی پولیس مقابلوں میں مارا گیا۔فواد چوہدری نے کہا کہ عمران خان پنجاب میں جعلی پولیس مقابلوں پر عدالتی کاروائی کا مطالبہ کر چکے ہیں، تحریک انصاف جعلی مقابلوں میں مارے جانے والوں کے ساتھ کھڑی ہے اور جعلی مقابلوں کے مقدمہ میں فریق بننے کا فیصلہ کیا ہے۔