پاک بحریہ ، رائل سعودی نیول فورس کی نسیم البحر سیریز کی گیارہویں مشقوں کا آغاز

11 فروری 2018

لاہور(خبر نگار) پاک بحریہ اور رائل سعودی نیول فورس کے مابین منعقد ہونے والی مشقوں نسیم البحر، پہلی مشترکہ مائن کاؤنٹر میژرز مشق(MCM) اور میرین فورسز کی مشق ڈیرہ الساحل کا آغازہو گیا ہے۔ یہ مشقیں سعودی عرب کی بندرگاہ الجبیل میں منعقد کی جارہی ہیں۔ یہ نسیم البحر سیریز کی گیارھویں مشق ہے جو کہ 17فروری تک جاری رہیں گی۔ یہ مشقیں پہلی بار سعودی عرب کے سمندر میں منعقد کی جارہی ہیں۔ان مشقوں کے انعقاد کا مقصد پاکستان اور سعودی بحریہ کے مابین موجود تعلقات کو مزید مستحکم کرنا ہے۔ ان مشقوں میں روایتی اور غیر روایتی جنگی چالوں کے ذریعے میری ٹائم آپریشنز کیے جاتے ہیں جس سے دونوں افواج کے درمیان مشترکہ آپریشنز کی صلاحیت کو بہتر بنایا جاتا ہے۔ قبل ازیںپاک بحریہ کے پانچ جہازوں پی این ایس ذوالفقار، پی این ایس طارق، پی این ایس عظمت، قوت اور پی این ایس منصف پر مشتمل بحری بیڑہ ان مشقوں میں شرکت کے لیے سعودی عرب کی بندرگاہ الجبیل پہنچا۔ پاک بحریہ کے جہازوں پر موجود ہیلی کاپٹرز اورپی تھری سی اورین ، لانگ رینج میری ٹائم پٹرول ائیر کرافٹ بھی اس مشق میں حصہ لیں گے۔ پہلی مرتبہ مائن وارفئیر کی مشقیں بھی ان مشترکہ مشقوں کے ساتھ ساتھ منعقد کی جارہی ہیں۔پاکستانی بحری بیڑے کی سربراہی مشن کمانڈر کموڈور عدنان احمد کر رہے ہیں۔ بندرگاہ الجبیل پہنچنے پر سعودی بحریہ کے سینئیر افسران اور سیلرز نے پاک بحریہ کے جہازوں کا پر تپاک استقبال کیا۔ پاک بحریہ کے لیے رئیر ایڈمرل لافی بن حسین الحربی کی جانب سے نیول بیس میس میں عشائیے کا اہتمام بھی کیا گیا۔ سعودی بحریہ کے افسران کی ایک بڑی تعداد بشمول فلیگ آفیسرز (لاجسٹک ، ایوی ایشن اور میرینز کے کمانڈرز) اور بیس کمانڈرنے اس عشائیے میں شرکت کی۔

مری بکل دے وچ چور ....

فاضل چیف جسٹس کے گذشتہ روز کے ریمارکس معنی خیز ہیں۔ کیا توہین عدالت کا مرتکب ...