چین نے راڈار پر نظر نہ آنے والا جے 20 سٹیلتھ طیارہ فضائیہ کے حوالے کردیا

11 فروری 2018

بیجنگ(آن لائن)چینی فضائیہ نے اعلان کیا ہے کہ اس کا نیا سٹیلتھ لڑاکا طیارہ جے 20 اب جنگی مقاصد کے لئے تیار ہے اور فضائیہ کے حوالے کر دیا گیا ہے تاہم چین کے صدر ملکی مسلح افواج کو جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس کرنے کے منصوبے کی نگرانی کر رہے ہیں جس میں اینٹی سیٹلائٹ میزائل ، آبدوزیں وغیرہ بھی شامل ہیں جبکہ ایک بیان میں چینی فضائیہ کا کہنا تھا کہ جے 20 کو لڑاکا یونٹس کا حصہ بنا دیا گیاہے۔ اس طیارے کی بدولت فضائیہ کی جنگی صلاحیت میں مزید اضافہ ہو گا جبکہ وہ ملکی خودمختاری ، سکیورٹی اور خطے کے دفاع کے لئے مقدس مشن مکمل کر سکے گی۔ تاہم یہ طیارہ امریکہ کے ایف 22 کی طرح راڈار کو دھوکہ دینے کی کتنی صلاحیت رکھتا ہے یہ فی الحال کہنا مشکل ہے ۔ ذرائع کے مطابق چین اس کے علاوہ ایک اور سٹیلتھ لڑاکا طیارہ جے 31بھی تیار کر رہا ہے جو کہ بین الاقوامی مارکیٹ میں امریکی ایف 35 کو ٹکر دے گا ۔