آسٹریلین ایوارڈ پاکستانیوں کی معاشی و معا شرتی ترقی کی راہیں ہموار کرتا ہے

11 فروری 2018

اسلام آباد ( رپورٹ : محمد ذیشان )"آسٹریلین ایوارڈ "پر آسٹریلیا میں تعلیم حاصل کرنے کے بعد 106پاکستانی طلباء و طالبات پاکستان پہنچ گئے ۔آسٹریلین ہائی کمیشنر ماگیرٹ ایڈمسن نے شارٹ ٹرم اور ماسٹرپروگرام حاصل کرنے والے طلبا ء کو ہفتہ کو استقبالیہ پیش کیا اور انکی محنتوں کو سراہا۔انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا حکومت کی طرف سے آسٹریلیا ایوارڈ پاکستانیوں کے لئے انکی قابلیت ،معاشی اور معا شرتی ترقی کی راہیں ہموار کرتا ہے۔تعلیم دونوں ملکوں کے ما بین تعلقات کی ایک اہم کڑ ی ہے۔جو ان پاکستانی طلباء و طالبات کی وجہ سے مزید مضبوط اور مستحکم ہو گی جو حصول تعلیم کے لیے آسٹریلیا کو ترجیح دیتے ہیں۔آسٹریلین ایوارڈ یافتہ فائضہ رحمان سید نے کہا کہ آسٹریلیا میں تعلیم حا صل کرنے کی بدولت ہماری صلاحتیوں کو جگہ ملی ہے۔جو ہمیں ایسا پلیٹ فارم مہیا کرتا ہے جس کی مدد سے ہم اپنے ملک اور معاشرے کی ترقی کے لیے بہتر خدمات سر انجام دے سکتے ہیں۔آسٹریلین ہائی کمیشن نے اس سال کے لیے آسٹریلین ایوارڈ آسٹریلیا کے لیے جانے والوں کی درخواستیں طلب کر لی ہیں۔گلگت بلتستان،بلوچستان،فاٹا خیبر پختونخواہ اور دوسرے علاقوں کی عوام بالخصوص خواتین کی جانب سے آنے والی درخواستیں کو آسٹریلین ایوارڈ کے لیے ترجیح دی جائے گی۔ مزید معلومات کیلئے حمزہ ابرار خان سے سیل فون نمبر 0345-5570158 یا hamza.khan@australiaawardspakistan.org پر رابطہ قائم کیا جا سکتا ہے۔