٭…ایک تصویر ایک کہانی…٭

11 فروری 2018

لٹن روڈ کا رہائشی مبین زمین پر بیٹھا پکوڑے فروخت کرتا ہے۔ 50 سال کی عمر ہوگئی ہے۔اس نے بتایا گزشتہ دس سال سے اسی جگہ پر مزدوری کر رہا ہوں۔ اللہ تعالیٰ کے بعد گھر والوں کا شکر گزار ہوں جنہوں نے مجھے اپنے دروازے کے آگے کام کرنے کی اجازت دی ہے۔ پانچ بیٹیاں اللہ تعالیٰ نے عطا کی اب ایک فوت ہوگئی ہے۔ باقی چار بیٹیاں ہیں جو تعلیم حاصل کر رہی ہیں۔ یہی بیٹیاں مجھے بیٹے کا احساس نہیں ہونے دیتی۔ بیٹیاں بھی اللہ تعالیٰ کی رحمت ہیں۔ اسی لئے میں مایوس نہیں ہوتا کیونکہ اللہ تعالیٰ ہے۔ انکے نیک سبب بنائے گا اور میں انکی شادیاں کر سکوں گا۔ مہنگائی کے اس دور میں مکان کا کرایہ بل وغیرہ ادا کرکے مشکل سے گزارا ہو رہا ہے۔ لیکن میری کوشش یہی ہے کہ بچیاں اچھی تعلیم حاصل کرلیں اور اللہ تعالیٰ مجھے انکے فرض سے سر خرو کرے۔(فوٹو:اعجاز لاہوری )

ایک تصویر ایک کہانی

شاد باغ عامر روڈ کا رہائشی 60 سالہ محمد سلیم رفوگر کا بہترین کاریگر ہے اور 25 ...

ایک تصویر ایک کہانی

بلال داتا دربار کے سامنے بید کی فرنیچر مارکیٹ میں اپنے والد کے ہمراہ کام کرتا ...