تحریک انصاف نے اسحاق ڈار اور سعدیہ عباسی کی سینٹ نامزدگی الیکشن کمشن میں چیلنج کردی

11 فروری 2018

لاہور‘اسلام آباد (سپیشل رپورٹر‘نمائندہ خصوصی ‘خصوصی نمائندہ ) تحریک انصاف نے اسحاق ڈار اور وزیر اعظم کی ہمشیرہ سعدیہ عباسی کی سینٹ میں نامزدگی کو الیکشن کمشن میں چیلنج کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق سربراہ تحریک انصاف عمران خان سے مشاورت کے بعد پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں محمودالرشید نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما اسحاق ڈار کے سینٹ میں کاغذات نامزدگی کو چیلنج کردیا۔ ترجمان اپوزیشن لیڈر حافظ ذیشان رشید کے مطابق کاغذات نامزدگی کو الیکشن کمیشن میں چیلنج کرتے ہوئے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ اسحاق ڈار نیب کے اشتہاری ہیں ، ان کے جائیداد فروخت کرنے پر پابندی عائد ہے جبکہ ملک کی سب سے بڑی عدالت سپریم کورٹ میں اسحاق ڈار کیخلاف منی لانڈرنگ اور ناجائز اثاثہ جات بنانے سے متعلق کیس زیر سماعت ہے، مزید یہ کہ کاغذات نامزدگی پرجو دستخط اور انکے ہمراہ جمع کرائی جانے والی دستاویزات بھی جعلی ہیں ۔ اسحاق ڈار نے ایک ہی بینک اکاﺅنٹ پر دو کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں جو غلط ہیں استدعا ہے کہ اسحاق ڈار کو انتخاب میں حصہ لینے سے روکا جائے اور اسحاق ڈار کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جائیں۔ آئی این پی کے مطابق سینٹ کے ہونے والے انتخابات میں خواتین کی مخصوص نشست پر الیکشن کےلئے تحریک انصاف کی امیدوار عندلیب عباس نے ہفتہ کے روز وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی ہمشیرہ سعدیہ عباسی کے کاغذات نامزدگی کو چیلنج کر دیا۔ اسلام آباد سے نمائندہ خصوصی کے مطابق اسلام آباد سے سینٹ کی خالی ہونے والی دو نشستوں پر 8امیدواروں کی جانب سے کاغذات نامزدگی جمع کرائے گئے ہیں۔ ہفتہ کو کاغذات نامزدگی جمع کرانے کی آخری تاریخ تھی۔ اسلام آباد سے سینٹ کی خالی ہونے والی عمومی نشست پر 5امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ان میں مسلم لیگ ن کی جانب سے محمد اسد علی خان جونیجو، فرید حسین اور چوہدری عاطف فضل جبکہ پی پی پی کی جانب سے راجہ عمران افضل اور پی ٹی آئی کی جانب سے کنول شازیب نے کاغذات جمع کرائے۔ ٹیکنو کریٹ کی ایک خالی ہونے والی نشست پر مسلم لیگ ن کے مشاہد حسین سید اور ڈاکٹر طاہر محمود جبکہ پی پی پی کے راجہ شکیل عباسی کی جانب سے کاغذات نامزدگی جمع کرائے گئے ہیں۔ علاوہ ازیں فاٹا سے سینٹ کی خالی ہونے والی 4نشستوں پر 4امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرا دیے ہیں۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری تفصیلات کے مطابق ہفتہ کو کاغذات نامزدگی جمع کرانے والوں میںشمیم آفریدی، ہدایت، ساجد طوری اور مرزا محمد شامل ہیں۔ فاٹا سے 4نشستوں کے لئے کاغذات نامزدگی کل پیر تک جمع کرائے جا سکیں گے۔تین مارچ کو سینٹ کی 52نشستوں پر ہونے والے انتخابات میں چاروں صوبوں سے حصہ لینے والے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کا عمل شروع ہوگیا ہے جو(کل) پیر تک جاری رہے گا۔ چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی سمیت کئی امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال مکمل ہوگئی ہے۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق پنجاب ، سندھ ، خیبرپختونخوا اور بلوچستان سے سینیٹ انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال (کل) پیر تک جاری رہے گی۔ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد سے سینیٹ کی دو نشستوں پر حصہ لینے والے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال 13 فروری تک مکمل کرلی جائے گی۔ فاٹا سے چار امیدواروں کی جانب سے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کی آخری تاریخ 12 فروری مقرر کی گئی ہے ۔ الیکشن کمیشن کے دفاتر آج اتوار کو بھی کھلے رہیں گے۔
نامزدگی / چیلنج