بحران مزید سنگین فاروق ستار اور دوسری طرف عامر خان گروپ کو مائنس کرنے کی تیاریاںتیز ہوگئیں

11 فروری 2018

کراچی (نیٹ نیوز)متحدہ قومی موومنٹ پاکستان میں پارٹی بحران مزید سنگین ہوگیا ،دونوں دھڑوں کے اہم اجلاس میں ایک طرف فاروق ستار اور دوسری طرف عامر خان گروپ کو مائنس کرنے کی تیاریاںتیز ہوگئیں۔ذرائع کے مطابق رابطہ کمیٹی دو تہائی اکثریت سے پارٹی سربراہ فاروق ستار کو مائنس کرنے پر تیار ہوگئی ہے ،آج کے اجلاس میں اہم فیصلہ کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے آج جنرل ورکرز اجلاس بلایا ہے جس میں عامر خان گروپ کو مائنس کرنے پر غور کیا جائےگا۔ذرائع کے مطابق پارٹی آئین کے مطابق فاروق ستار فیصلوں کی توثیق کل جنرل ورکرز اجلاس میں کرائیں گے ،اس موقع پر سیاسی اور تنظیمی سرگرمیاں دوبارہ شروع کرنے کا بھی فیصلہ ہوگا۔ذرائع کے مطابق رابطہ کمیٹی نے سفارتی رابطوں کا ٹاسک میئر کراچی وسیم اختر،سینیٹر نسرین جلیل اور فیصل سبزواری کے سپرد کردیا ہے۔ذرائع کے مطابق رابطہ کمیٹی نے سیاسی رابطے کے لئے ڈاکٹر خالد مقبول ،کنور نوید جمیل اور روف صدیقی کی ذمہ داری لگائی ہے۔ذرائع کے مطابق رابطہ کمیٹی کے اجلاس میںتنظیمی سطح پر ہونے والی تبدیلیوں پر مشاورت ہوگی۔نوائے وقت رپورٹ کے مطابق سید سردار احمد رابطہ کمیٹی سے مستعفی جبکہ عامرخان میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے۔پی ایس پی کے رہنما سلمان مجاہد بلوچ نے ایم کیو ایم پاکستان میں شمولیت اختیار کرلی۔ ترجمان کے مطابق سلمان مجاہد بلوچ نے فاروق ستار سے ملاقات میں شمولیت اختیار کی۔ سلمان مجاہد بلوچ نے فاروق ستار کی قیادت پر اعتماد کا اظہار کرتے پی ایس پی کو خیرباد کہہ دیا ہے۔نیٹ نیوز کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے سر براہ فاروق ستار نے رابطہ کمیٹی کے ارکان کو شو کاز نوٹس بھیجنے کا اعلان کرکے آج اتوار تک کی مہلت دے دی اور کہا اب آئینی جنگ ہوگی جبکہ تمام اجلاس اور فیصلے غیر آئینی قرار دے دیئے۔ اپنی رہائش گاہ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا اپنی سر براہی سے متعلق فیصلہ بھی آج جنرل ورکرزاجلاس میں کروں گا ۔انہوں نے کہاآج الیکشن کمیشن کو خط لکھ کر رابطہ کمیٹی کا بھیجا گیا خط مسترد کرنے کا کہوں گا کیونکہ یہ خط مجھ پر عدم اعتماد ہے۔ میرے اختیارات پر شب خون مارا گیا، پیٹھ پر وار کیا گیا، کارکنان باہر نکلیں اور پارٹی بچائیں جبکہ رابطہ کمیٹی اور بہادر آباد دفتر پر چند افراد قبضہ کر کے فیصلے کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا رابطہ کمیٹی کا الیکشن کمیشن کو خط عدم اعتماد کا ثبوت ہے، اب وہ کس منہ سے بہادر آباد جائیں ؟جبکہ بلی تھیلے سے باہر آگئی ہے۔انہوں نے کہا بہادرآباد گروپ کی رابطہ کمیٹی نے حیدر عباس کے دستخط کینیڈا سے منگوائے جبکہ خواجہ اظہار نے سائن نہیں کیے۔مزید براں متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی سینئر رہنما سینیٹر نسرین جلیل نے کہا پہلے کی طرح ون مین شو نہیں چلے گا۔ ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کی سفارتی کمیٹی میں شامل نسرین جلیل نے کہا فاروق ستار کی ضد کی وجہ سے ہزاروں کارکن پریشان ہیں۔ پارٹی میں ہر فیصلہ ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی کی مشاورت سے ہوگا۔
نجی ٹی وی کے مطابق عامر خان ایم کیو ایم پاکستان کے سلمان مجاہد بلوچ کی جانب سے سازشی کہنے پر آبدیدہ ہوئے۔ پریس کانفرنس کے دوران فیصل سبزواری بھی آبدیدہ ہوگئے۔ عامر خان نے کہا مجھ پر بے ہودہ الزامات لگائے گئے۔ آج تک پارٹی سربراہی کی خواہش نہیںکی، تاثر دینے کی کوشش کی جارہی ہے میری اور فاروق ستار کی لڑائی ہے۔ 22 مئی 2011ءکو ایم کیو ایم میں دوبارہ شمولیت اختیار کی تھی، عزت و احترام عہدے سے نہیں ملتا، میرا عزت و احترام کارکن ہیں، ساری زندگی کنوینر نہیں بنوں گا، میں کارکن کی حیثیت سے کام کرنے میں خوش ہوں۔ پی ایس پی چھوڑ کر ایم کیو ایم پاکستان میں شامل ہونے والے سلمان مجاہد بلوچ نے کہا ہے جھگڑا سینٹ کی نشست کا نہیں مائنس ون کا ہے، انیس قائم خانی سے درخواست ہے وہ بھی آئیں اور فاروق بھائی کے ہاتھ مضبوط کریں۔ عمران فاروق شہید اور دیگر شہداءکے خاندان فاروق ستار کے ساتھ ہیں، آج ہمیں فاروق ستار کے ہاتھ مضبوط کرنے کی ضرورت ہے۔ کچھ لوگ نہیں چاہتے فاروق ستار ایم کیو ایم کی سربراہی کریں۔ میرے ساتھ ارم عظیم فاروقی کو بھی پارٹی میں آنے سے روکا جاتا رہا، میں ارم سے کہوں گا آئیں فاروق ستار کا ساتھ دیں۔ عامر خان سازشی آدمی ہیں جب تک عامر خان سازش نہ کرلیں تب تک ان کو نیند نہیں آتی۔ ترجمان پی ایس پی نے سلمان مجاہد بلوچ کے ایم کیو ایم پاکستان میں شمولیت پر کہا ہے کسی کے جانے پر کوئی پابندی نہیں، پی ایس پی میں آنے والے کو ویلکم کرتے ہیں۔ پی ایس پی واحد جماعت ہے جہاں زور زبردستی نہیں ہوتی۔

متحدہ/ بحران