میانی صاحب قبرستان کمیٹی نے 80 سال پرانے راستے اور گھروں کے باہر دیوار بنادی

11 فروری 2018

لاہور(خبر نگار)میانی صاحب قبرستان کمیٹی نے 80سال پرانے راستے کو بند کرنے کیلئے درجنوں گھروں کے باہر دیوار کھڑی کردی جس سے خواتین ، بچے اور طلباء و طالبات اپنے گھروں میں قید ہوگئے ۔ اہل علاقہ نے چیئرمین یونین کونسل کی سربراہی میں انتظامیہ کے خلاف شدید احتجاج کیا ۔میانی صاحب قبرستان کمیٹی کے حکم پر اسلم پارک میں 80سال سے آباد رہائشیوں کے گھروں کے باہر دیوار کھڑی کردی ۔اورگھروں کو آنے جانے والے واحد راستے بھی بند کرنا شروع کردئیے جس پر اہل علاقہ سراپا احتجاج بن گئے ۔ خواتین بچے ، بزرگ اور طلباء و طالبات نے دن بھر میانی صاحب قبرستان کمیٹی کے خلاف شدید احتجاج کیا جس میں دو بزرگ خواتین بے ہوش ہوگئیں ۔احتجاج میں چیئرمن یونین کونسل چوہدری ممتاز سرور گجرسمیت سیاسی شخصیات بھی شامل ہوئیں ۔ اہل علاقہ نے بتایا کہ میانی صاحب قبرستان کمیٹی کو رہائش گاہوں پر کوئی اعتراض نہیں ملا تو اس نے عدالت کو گمراہ کرنا شروع کردیا اور آٹھ دہائیوں سے منظور شدہ راستے کو بند کیلئے پراپیگنڈہ شروع کردیا۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ پچاس سال قبل سیشن کورٹ میں ہوئے فیصلہ کو نظر انداز کرکے رہائش گاہوں کو ان کے مکینوں کیلئے مقتل بنانے کی سازش کی گئی ہے ۔ اہل علاقہ نے کہا ملک کی قومی اسمبلی کے اسپیکر ان کے ووٹوں سے منتخب ہوئے ہیں اور انہیں اپنے ووٹروں کا احساس کرنا چاہئے ۔اہل علاقہ کے مطابق آئندہ احتجاج کیلئے مشاورت کے بعد اعلان کیا جائے جس کیلئے پرامن احتجاج ہوگا لیکن پنجاب اسمبلی کے سامنے ہوگا۔