نظام الدین نے سیاست سے دستبرداری کا فیصلہ واپس لے لیا

11 فروری 2018

ساہیوال/ سرگودھا (نامہ نگار)کارکنوں کے احتجاج اور پیر آف سیال شریف کے حکم پر مسلم لیگی ایم پی اے نظام الدین سیالوی نے سیاست سے دستبرداری کا فیصلہ واپس لے لیا ہے۔ نظام الدین سیالوی نے سجادہ نشین سیال شریف محمد حمید الدین سیالوی سے ملاقات کی جس میں پیر آف سیال شریف نے انہیں سیاست سے دستبردار ہونے کا فیصلہ واپس لینے کا حکم دیا جس پر ایم پی اے نظام سیالوی نے اپنے تحفظات سے انہیں آگاہ کیااور بتایا کہ جو حالات پیدا کر دیئے گئے ہیں ان میں سیاست سے کنارہ کشی ہی بہتر ہے تاہم پیر آف سیال شریف نے انہیںہر قسم کے تعاون کی یقین دہانی کرائی جس پر لیگی ایم پی اے نظام سیالوی نے سیاست سے دستبرداری کا فیصلہ واپس لیتے ہوئے کہا کہ وہ حلقہ کی تعمیر و ترقی اور کارکنان کے حقوق کے تحفظ کیلئے اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے اور آئندہ انتخابات میں بھی حصہ لیں گے۔ پیر آف سیال شریف نے میڈیا سے بات میں کہا کہ نظام الدین سیالوی ہی انکے سیاسی جانشین ہیں اور سیاسی حوالے سے وہ جو فیصلے کریں گے انکی مکمل تائید اور حمائت کی جائیگی اور وہ پہلے سے بڑھ کر عوام کی خدمت کا فریضہ سرانجام دیں گے۔دوسری طرف تحریک ختم نبوت کے حوالہ سے درگاہ سیال شریف کے ترجمان سید شمس الرحمان مشہدی نے کہا ہے کہ پیر آف سیال شریف اور انکی قائم کردہ کمیٹی رانا ثنا اللہ کی وضاحت سے ہر گز مطمئن نہیں اور وہ اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔ اس ضمن میں ختم نبوت کانفرنسز کا شیڈول جاری کر دیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق پچھلے کچھ روز سے سجادہ نشین کو دھمکیاں بھی دی جارہی ہیں کہ اگر وہ استعفیٰ اور قادیانیوں کو کلیدی عہدوں سے ہٹانے کے مطالبہ سے باز نہ آئے تو اسکا خمیازہ انہیں بھگتنا پڑیگا۔ پیر آف سیال شریف کی رہائش بنگلہ شریف اور صاحبزادہ قاسم سیالوی کی رہائشگاہ کی سکیورٹی سخت کردی گئی ہے۔ 

نظام سیالوی