کشمیر ہائی وے اور بنی گالا میں قائم غیرقانونی شادی ہالز کیخلاف آپریشن کا فیصلہ

11 اپریل 2018

اسلام آباد(وقائع نگار) وفاقی ترقیاتی ادارہ(سی ڈی اے)کے شعبہ بلڈنگ کنٹرول ون(بی سی ایس1)نے کشمیر ہائی وے ،G-12-13,H13 اور بنی گالامیں قائم 12غیر قانونی شادی ہالزاورمارکیز کے خلاف ''گرینڈ آپریشن '' کی حتمی تیاریاں مکمل کرلی ہیں ،آئندہ چند دنوں میں مذکوہ شادی ہالز و مارکیز کو مسمارکرنے کیلئے آپریشن متوقع ہے ،کسی بھی وقت متوقع آپریشن کے پیش نظر بی سی ایس ڈائریکٹر نے بذریعہاشتہار شہریوں کوکسی بھی تکلیف سے بچنے کیلئے مذکورہ بارہ مارکیز میں اپنے ایونٹس اورفنگشنز کی بکنگ نہ کروانے کے لئے مطلع کردیا۔ڈائریکٹر بی سی ایس ون فیصل نعیم نے مذکورہ مارکیز کو مسمارکرنے کیلئے آئندہ چندہ دنوں میں آپریشن کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ مارکیز اورشادی ہالز کے مالکان سمیت آ پریشن کا حصہ بننے والے سی ڈی اے ،ایم سی آئی کے تما م شعبہ جات ا و ردیگراداروں کو آگاہ کردیاہے ۔تفصیلات کے مطابق وفاقی ترقیاتی ادارہ (سی ڈی اے) انتظامیہ نے آئی سی ٹی زوننگ ریگولیشنز 1992اوراس کی ترمیم کے مطابق وفاقی دارالحکومت کے جن علاقوں اورسیکٹرز میں شادی ہالز اورمارکیز کی تعمیر پر مکمل طور پر پابندی عائد کررکھی ہے ان علاقوں میںتعمیر شدہ 12شادی ہالز اورمارکیز جن میںراول مارکی بنی گالا اسلام آبا د،وینیو ون مارکی کشمیر ہائی وے (سیکٹر جی بارہ)،کیپیٹل مارکی کشمیر ہائی وے (جی بارہ)،گلیکسی مارکی کشمیر ہائی وے (سیکٹر جی بارہ) ،امپریل مارکی (سیکٹرایچ تیرہ)،ایگزیکٹو مارکی (سیکٹر ایچ تیرہ)،ریانز مارکی (سیکٹر جی بارہ )بالمقابل G-13/4،لاپرل شادی ہال(سیکٹر جی بارہ)باالمقابلG-13،،روہتاس ماکی کشمیر ہائی وے (سیکٹر جی بارہ)ریگالین گولڈ مارکی کشمیر ہائی وے (سیکٹر جی بارہ)،اوکینز (Occasion)کشمیر ہائی وے (سیکٹر جی بارہ)اورگولڈن ہارس مارکی کشمیر ہائی وے (سیکٹر جی بارہ) شامل ہیںکو مکمل طور پر غیر قانونی قراردیتے ہوئے ان کے مالکان کو 15دنوں کے اندر اپنی اپنی عمارات کو ازخود مسمار کرنے کیلئے باقاعدہ طور پر نوٹسسز جاری کئے تھے۔