آرٹسٹ سپورٹس فنڈ سے وظیفہ نہ ملنے پر فنکاروں کا احتجاجی مظاہرہ

11 اپریل 2018

لاہور (کلچرل رپورٹر) دس ماہ گزر جانے کے باوجودآرٹسٹ سپورٹ فنڈزسے وظیفے نہ ملنے پرفنکاربرادری نے گزشتہ روزلاہورپریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں درجنوںکی تعداد میںسینئر مستحق فنکاروں نے شرکت کی ۔ فنکاروں نے بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے۔ انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیاکہ وہ فور ی نوٹس لیں اورہمارے وظیفے بحال کیے جائیں۔فنکاروں کا کہنا تھاکہ وظیفوںکی بدولت ہمارے گھروں کے چولہے جلتے ہیں لیکن دس ماہ سے ہمیں کچھ نہیں دیا گیا۔ ہمارے کئی ساتھی کسمپرسی کی حالت میں اس دنیاسے رخصت ہو چکے ہیں۔ بعض فنکاروں کے عدم ادائیگی پر بجلی کے بل کنکشن کاٹے جا چکے ہیں اور بہت فنکاروں اپنے بچوںکو تعلیم نہیں دلوا سکتے اور بیماریوںکے علاج کیلئے انکے پاس پیسے نہیں ہیں۔ ہمیں پانچ ہزار روپے وظیفے منظور نہیں ہیں ہمارے پرانے وظیفے بحال کیے جائیں۔ خادم اعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف نے بے روزگار اور بیمار فنکاروںکے وظیفوں کی سکیم جاری کرکے ایک بہت بڑا کارنامہ انجام دیا تھا لیکن ہر سال جب نیا بجٹ آتا ہے تو ہمیںچھ چھ ماہ تک انتظارکرنا پڑتا ہے لیکن رواں برس صبرکی انتہا ہوگئی ہے کہ دس ماہ سے ہمیں وظیفے نہیںمل رہے۔ انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سے یہ بھی مطالبہ کیاہے کہ آرٹسٹ سپورٹ فنڈ کو بجٹ میں شامل کیا جائے تاکہ ہمیں ہر سال اتنا انتظار نہ کرنا پڑے۔ انکا کہنا تھا کہ اگر ہماری حق رسی نہ ہوئی تو ہم وزیراعلیٰ ہائوس کے سامنے بھوک ہڑتال کریںگے۔ احتجاجی مظاہرے میں گلوکارہ ترنم ناز، حسین بخش گلو، شفاعت اعوان، غفار لہری، نثار بٹ، غفار لہری ، اعجاز لوہار، عمران فاروقی، سلیم شاد، شفاعت اعوان، نفیسہ مہتاب ، طارق ظریف، رفعت مغل، طارق جیکسن، موسیقار سلیم حیدر، عنایت عابد، ابرار ہاشمی ا ور دیگر شامل تھے۔