امریکی جنگی جہاز شامی ساحل پر پہنچ گیا ، روسی طیاروں کی نچلی پروازیں

11 اپریل 2018

دمشق/ انقرہ (نیوز ایجنسیاں+ اے ایف پی + نوائے وقت رپورٹ) امریکی بحری جہاز یو ایس ایس ڈونلڈ کک شام کے ساحل کے قریب پہنچ گیا ۔ جدید ٹام ہاک کروز میزائل سے لیس ہے، روس کے لڑاکا طیاروں نے بحری جہاز کے قریب نچلی پروازیں کیں۔ ترک میڈیا کے مطابق بحری جہاز کے کیپٹن اور سوار فوجیوں کو بھی ہراساں کیا۔ یہ جہاز قبرص کی طرف سے آیا ہے ادھر امریکی نیوی اور پینٹاگون حکام نے جہاز کے عملے کو ہراساں کرنے کی رپورٹس کو مسترد کر دیا۔ آن لائن کے مطابق چین نے شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی تحقیقات کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔ اقوام متحدہ میں چین کے نائب مستقل نمائندے نے کہا کہ چین شام میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے معاملے کی جامع ، بامقصد اور غیر جانبدارانہ تحقیقات کا حامی ہے، اصل ذمہ داران کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔ ساتھ ہی شام میں فوجی کارروائی پر انتباہ کیا۔ ترجمان وزارت خارجہ گینگ شوانگ نے کہا طاقت کے استعمال کیخلاف ہیں۔ ایران کی خارجہ پالیسی کے مشیر علی اکبر ولایتی نے کہا حمس میں حملے میں ہمارے 7فوجی مارے گئے۔ اسرائیل کو جواب طلبی کے بغیر نہیں چھوڑیں گے۔ ادھر ترکی صدر طیب اردگان نے کہا کیمیائی حملے میں شہریوں کو مارنے والوں کو بھاری قیمت چکانا پڑیگی، ذمہ داروں کو کٹہرے میں لایا جائے۔ روسی سفیر نے کیمیائی حملے کو ڈرامہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا امریکہ نے کیمیائی حملوں کی آڑ میں کوئی فوجی کارروائی کی تو اس کے نتائج تباہ کن ہوں گے۔ اسرائیلی وزیر خارجہ نے کہا ہے ایران کو شام میں مورچہ بندی کی اجازت نہیں دیں گے۔ ایران کو روکیں گے چاہے اس کی جو قیمت ادا کرنی پڑے۔ ایران کو روکنے کے سوا اور کوئی آپشن نہیں۔ اسرائیلی وزیر دفاع کا کہنا ہے کہ شام میں ایرانیوں کو مضبوط ہونے دینا اپنا گلا گھونٹنے کے مترادف ہے۔ شامی بیس پر میزائل حملے کی تصدیق سے گریز کیا۔ شامی حکومت نے اقوام متحدہ کو دوما میں کیمیائی حملے کی تحقیقات کی دعوت دیدی۔ وزارت خارجہ نے انسداد کیمیائی ہتھیار تنظیم کو باضابطہ مدعو کرلیا اور کہا ہے کہ اقوام متحدہ تنظیم اپنا فیکٹ فائنڈنگ مشن دوما بھیجے۔ آئی این پی، آن لائن کے مطابق جم میٹس نے کہا دوما زہریلی گیس حملے میں روس ملوث ہوسکتا ہے، فوجی جواب دینے کا امکان مسترد نہیں کرتے۔ امریکہ کے ممکنہ حملے کے پیش نظر شام میں ریڈ الرٹ ہے۔ ماسکو میں اسرائیلی سفیر کو صورتحال پر تبادلہ خیال کیلئے طلب کرلیا گیا۔ شام میں کیمیائی حملے پر سلامتی کونسل میںامریکی قرارداد پر ووٹنگ ہوگی۔ روس کی طرف سے ویٹو کا خدشہ ہے۔ تفتیش کیلئے نگران عالمی ادارہے کا وفد شام جائے گا۔ روس نے سلامتی کونسل کی قرارداد ویٹو کر دی۔ غیر ملکی کیمیائی اسلحے کے استعمال کی تحقیقات سے متعلق تھی اور امریکہ نے پیش کی تھی‘ روسی مندوب نے کہا کہ امریکہ کو ایک سال پہلے کی طرح حملے کا بہانہ چاہئے۔