اراضی کے تنازع پر قتل، گلگشت پولیس نے متعدد افراد گرفتار کرلئے

11 اپریل 2018

ملتان( خبر نگار خصوصی) تھانہ گلگشت کی پولیس کی غفلت کے باعث کمرشل اراضی پر قبضے کے دوران قتل کے واقعہ میںملوث افراد میں سے متعدد ملزمان گرفتار کرلئے جبکہ پولیس نے 2خواتین سمیت9نامزد ومتعدد نامعلوم افراد کے خلاف دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے یہ مقدمہ مقتول عالم شیر کے والد اعجاز سیال کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے جس میں ملزمان مرکزی ملزم رانا محمد افضل، محمد علی، شہباز، محمدمشتاق، محمد الطاف، اشفاق احمد، محمد سعید اور دو خواتین سمیت9افراد کو نامزد کیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق اعجاز سیال کی اراضی پر قبضہ کرنے والے رانا افضل گروپ کو پولیس کی حمایت حاصل تھی۔ رانا محمد افضل نے پلاٹ پر مشتری ہوشیار باش کا پینافلیکس بھی لگادیا ہے جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ یہ پلاٹ ان کی ملکیت ہے اور اس کا کیس سول کورٹ میں زیر سماعت ہے۔ گلگشت کالونی میں دن دیہاڑے قتل کی لرزہ خیز واردات میںمسلح افراد رانا افضل ودیگر کی فائرنگ کے نتیجے میں قتل ہونے والے اعجاز سیال کے صاحبزادے عالم شیر کی نماز جنازہ گزشتہ روز شاہی جامع مسجد طوطلاں والی میں ادا کی گئی ۔ نماز جنازہ شاہی جامع مسجد طوطلاں والی کے امام جماعت اہلسنت ملتان ڈویژن کے ناظم اعلیٰ قاری مطیع الرسول سعیدی نے پڑھائی۔ مرحوم کی قل خوانی 12اپریل بروز جمعرات اعجاز سیال کی رہائش گاہ الحسین مارکیٹ چوک شاہ عباس میں صبح8بجے شروع ہوگی دعا 10بجے ہوگی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ گلگشت پولیس نے متعدد افراد کو حراست میں لے رکھا ہے اور تفتیش کا سلسلہ جاری ہے۔