سندھ اسمبلی میں پانی کی قلت کیخلاف قرارداد متفقہ طور پر منظور

11 اپریل 2018

کراچی (سٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی نے پیر کوسندھ میں پانی کی قلت کے خلاف ایک قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی ‘قرارداد صوبائی وزیر پارلیمانی امور نثاراحمد کھوڑو نے سندھ اس پیش کی تھی‘قرارداد میں ارسا کے رویہ پر سخت تنقید کرتے ہوئے سپریم کورٹ آف پاکستان سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ وفاقی حکومت کو یہ ہدایت کرے گی کہ وہ ایسے قدامات کو یقنی بنائے جو حکومتیں دریائی ڈیلٹاکے تحفظ کیلئے کرتی ہیں۔قرارداد میں کہا گیا ہے کہ دریائے سندھ کی ٹیل میں پانی کی کمی کی وجہ سے سندھ کی 22 لاکھ ایکڑ زمین سمندر برد ہوگئی ہے ۔انڈس ریور سٹسم اتھارٹی نے پانی کہ معاہدے پر عملدرآمد نہیں کیا گیا۔وزیر پارلیمانی امور نثار احمد کھوڑو نے کہاکہ ہمارا قصور کیا ہے ہمیں پیاسہ کیوں رکھا جا رہا ہے ‘ ارسا کنٹرولنگ اتھارٹی ہے ‘ وہ معاھدے پر عمل کیوں نہیں کرتی‘ سپریم کورٹ سندھ میں نہری اور پینے کے پانی کی کمی کا نوٹس لے۔ نثار احمد نے کہاکہ جس اسمبلی نے پاکستان بنانے کی قرارداد پاس کی آج اسی اسمبلی کی قرارداد کو اہمیت نہیں دی جا رہی انہوں نے کہاکہ ایم کیو ایم کالاباغ ڈیم کی مخالفت کر رہی ہے‘ جی ڈی اے والے اس اہم مسئلے پرخاموش ہیں‘ پیر صدرالدین شاہ نے آج تک سندھ کے حقوق پربات نہیں کی‘ پیپلز پارٹی ہے تو وفاق پاکستان برقرار ہے۔ صوبائی وزیر امداد پتافی نے کہاکہ دوبوتل شراب مل جائے توسپریم کورٹ نوٹس لیتی ہے‘ سندھ میں پانی نہیں مل رہا سب خاموش ہیں۔ انہوں نے کہاکہ حکومت نے عدالت عظمیٰ سے ازخود نوٹس لینے کامطالبہ کرکے اپنی بے بسی کا اظہار کیا کراچی کو مردم شماری میں کم گنا گیا‘ عدالت عظمیٰ سے مردم شماری پرازخودنوٹس لینے کا مطالبہ کرتاہوں ۔قائدحزب اختلاف خواجہ اظہار الحسن نے کہاکہ قراداد کی حقیقت سے کوئی اعتراض نہیں ہے مگر اسمیں خامیوں پر کون بات کرے گا۔ ادھر اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے کہا ہے کہ نوازشریف کا اب سیاسی وقت پورا ہو چکا ہے انہیں اب واپس گھر جانا چاہئے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی ہر بات میں کہتے ہیں کہ وہ نوازشریف کے حامی ہیں لگتا ہے کہ ان کے اندر نوازشریف کی روح داخل ہوچکی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو سندھ اسمبلی بلڈنگ میں نئے پارکنگ ایریا کے افتتاح کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ تحریک انصاف نے ایمنسٹی اسکیم کے خلاف سندھ اسمبلی میں قرارداد جمع کرا دی‘ قرارداد پی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈر خرم شیر زمان نے جمع کرائی۔ وزیر اطلاعات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ گورنر سندھ اسمبلی سے منظور کردہ ہر قانون پر اعتراض لگادیتے ہیں‘ محمد زبیر کو گائیڈ کرنے والے اچھے لوگ نہیں ہیں ایم کیو ایم اب شخصی سیاست کر رہی ہے ڈاکٹر فاروق ستار بھی جلد پاک سرزمین پارٹی کا حصہ بن جائیں گے‘ کراچی میں لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کیلئے حکومت سندھ سنجیدہ ہے اور اس حوالے سے اقدامات کئے جا رہے ہیں‘ سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کی تبدیلی اپوزیشن جماعتوں کا حق ہے تاہم پیپلزپارٹی کو کسی کا ڈر نہیں ہے۔ایمنسٹی اسکیم کیلئے موجودہ وقت مناسب نہیں تھا۔سندھ کابینہ کے فیصلوں پر جلد از جلد عملدرآمد کروایا جاتا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو سند ھ کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔