آئین پارلیمنٹ کے ساتھ ہیں‘ ملک کو سیاسی چھچھوروں سے پاک کرنا ہے: فضل الرحمن

11 اپریل 2018

ہری پور (آئی این پی) مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ آج ملک میں سیاست پر مذہب بیزار قوتوں کی بالادستی ہے‘ مغرب کا طے کردہ ایجنڈا ہم پر مسلط کیا جا رہا ہے‘ پاکستان میں معیشت کی بنیاد سود پر ہے‘ قائداعظم نے معیشت کی بنیاد اسلامی اصولوں پر رکھنے کا کہا تھا‘ بندوق کے زور پر نہیں بلکہ اقتدار کا حق تو عوام کے ووٹ سے ہے‘ زبان اور قومیت کی بنیاد پر قوم کو تقسیم نہیں کرنا چاہتے‘ قوم کو سود سے پاک معیشت فراہم کرنا چاہتے ہیں‘ ہم بین المذاہب مکالمے اور مذاکرات کیلئے تیار ہیں‘ حزب اقتدار میں ہوں یا اختلاف میں ہمیشہ حق کی بات کرتے ہیں۔ ورکرز کنونشن سے میں فضل الرحمن نے کہا کہ ہمارا سفر سیاسی ہے آج پوری دنیا میں امت مسلمہ آزمائش سے گزر رہی ہے۔ اسلامی نظریاتی کونسل نے سودی نظام کے خلاف سفارشات دیدیں۔ خود کو اس قابل بنائیں کہ آپ کی آواز ایوان تک پہنچے۔ ستر سال سے حکمرانوں کی ناکامیاں ہی دیکھ رہے ہیں۔ مکالمے جنگ کے ماحول اور بارود کی بارش کے نیچے نہیں ہوتے۔ امریکہ افغانستان اور عراق سے نکل جائے۔ کچھ سیاست کے چھچھورے ہیں ان پر اپنی توانائی صرف نہ کریں، ان کی کوئی حیثیت نہیں، یہ سیاست کی بدبو اور تعفن ہیں، جن سے ملک کو پاک کریں گے۔ ووٹ کی پرچی تلوار کا کام کرتی ہے، اپنے اندر خوداعتمادی اور خودداری پیدا کریں۔ ہم ملک کے آئین، جمہوریت اور پارلیمنٹ کے ساتھ ہیں، حزب اقتدار میں ہوں یا اختلاف میں حق کی بات کریں گے۔ ہم اپنے گھر کے تحفظ کیلئے ہرقربانی دینے کو تیار ہیں، جمہوریت اور پارلیمنٹ کے ساتھ کھڑے ہیں۔ یہ زمانہ بندوق کے زور سے اقتدار حاصل کرنے کا نہیں ہے۔