پاک افغانستان تجارتی تعلقات وقت کی ضرورت ہے:زبیر موتی والا

11 اپریل 2018

کرا چی (کامرس رپورٹر)پاکستان افغانستان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (PAJCCI) کے چیئرمین زبیرموتی والا نے وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی کے دورہ افغانستان پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس وقت دوطرفہ خراب تعلقات اور بڑھتی ہوئی بے اعتمادی کے وقت، افغانستان میں وزیر اعظم کا حالیہ دورے کو دونوں ممالک کے درمیان تاریخی تعلقات کو مضبوط بنانے کے لئے اہم کردار ادا کیا جاسکتا ہے۔زبیرموتی والا نے پاکستان کے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اورافغانستان کے سربراہ مملکت پر زور دیا کہ دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی سے تجارتی تعلقات کو فروغ دینے میں مشکلات حائل ہیں اس لئے دوطرفہ تعلقات کی بہتری سے باہمی تجارت کو فروغ دیا جاسکتا ہے۔زبیرموتی والا نے دونوں ممالک کے مابین امن مذاکرات کے لئے زور دیا اور کہا کہ افغانستان کے دورے میںشاہد خاقان عباسی کے اعلانات خوش آئند ہیں اور ان اعلانات میں وہ وہ بھی تجاویز شامل ہیں جو اسلام آباد میں پاکستان افغانستان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیدار افغان پاکستان ریجنل کنیکٹیویٹی فورم دے چکے تھے۔
، جس میں قابل ذکر یہ تھا کہ دونوں ملکوں کے درمیان اقتصادی رابطے سیاسی اور سیکورٹی بنیادوں پر متاثر نہیں ہوں گے، سرحدی بارڈرزکی بندش سے بچا جائے اور اس کیلئے ٹیبل پرمذاکرات کئے جائیں۔ زبیر موتی والا نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی جانب سے افغانستان کو 40 ہزارٹن گندم بھی تحفتاً دینے کے عمل کو سراہااور کہا کہ اس اقدام سے برف پگھلے گی اور دونوں ملکوں کے درمیان طویل عرصہ سے متاثر کاروباری تعلقات کو بحال کرنے اور مضبوط بنانے میں مدد ملے گی ۔