معاشرے کو انصاف کی ضرورٹ ، بلاتعطل عدل ملے توخطرہ لاحق نہیں ہوتا : جسٹس یاور

11 اپریل 2018

ملتان (سپیشل رپورٹر) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس یاور علی خان نے کہا ہے کہ انصاف کی گاڑی کے وکلاء اور ججز دو پہیے ہیں۔ اگر یہ دونوں ٹھیک ہوں گے تو گاڑی انصاف کی منزل تک پہنچ پائے گی۔ آج کے معاشرہ کو انصاف کی ضرورت ہے۔ معاشرہ میں اگر انصاف کی فراہمی بلاتعطل ہو تو پھر اس معاشرہ کو کسی سے کوئی خطرہ لاحق نہیں ہوتا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہائیکورٹ بار کی نئی انتظامیہ کے چارج سنبھالنے کی تقریب سے خطاب میں کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس دن میں نے حلف اٹھایا تھا تو ساتھ ہی میں نے یہ بھی حلف اٹھایا تھا کہ وکلاء کی ہمیشہ عزت کروں گا۔ وکلاء اور ججز ملکر انصاف کی گاڑی چلاتے ہیں۔ پاکستان کا قیام ایک وکیل قائداعظم کی کوششوں کا ہی نتیجہ تھا۔ یہ کیسے ممکن ہے کہ بار اور بنچ اکٹھے نہ چلیں۔ بار اور بنچ اکٹھے ہونگے توہی معاشرہ میں انصاف کی جلد اور بہترین فراہمی ممکن ہو سکے گی۔ جس معاشرہ میں انصاف نہ ہو تو وہاں کچھ ٹھیک نہیں ہو سکتا۔ نو منتخب صدر ہائیکورٹ بار خالد اشرف خان نے کہا کہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کی یہاں موجودگی بار اور بنچ کے مضبوط رشتہ کی واضح دلیل بھی ہے۔