ایف بی آر نے ٹیکس سال 2016ء کی آڈٹ پالیسی کی منظوری دیدی

11 اپریل 2018

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) ایف بی آر نے ٹیکس سال 2016ء آڈٹ پالیسی کی منظوری دیدی۔ پالیسی کے مطابق جن ٹیکس گزاروں کے گوشوارے کمپیوٹر کے ذریعے آڈٹ کے لئے منتخب ہونگے۔ آئندہ 2 سال تک ایسے ٹیکس گزاروں کو آڈٹ میں شامل نہیں کیا جائیگا۔ انکم ٹیکس کے لئے مقررہ پیرا میٹرزکو خفیہ رکھا جائے گا۔ سیلز ٹیکس کے لئے پیرا میٹر کا تعین کیا گیا ہے۔ جن کے مطابق جہاں سپلائی کی ویلیو گزشتہ سال کے مقابلہ میں 10 فیصد گر گئی ہو۔ گزشتہ تین سال میں آؤٹ پٹ اور ان پٹ کی شرح میں مسلسل کمی آ رہی ہو۔ قابل ٹیکس سپلائی میں 10 فیصد کمی آئی ہیں۔ فیڈرل ایکسائز میں نان فائلرز اور ’نل‘ فائلرز کو آڈٹ کے لئے منتخب کیا جائیگا۔ ایسے افراد کا آڈٹ ہوگا جو اپنی 30 فیصد سے زیادہ خریداری غیررجسٹرڈ افراد سے کرتے ہیں۔ آڈٹ کی قرعہ اندازی جلد کی جائے گی۔