لاہور: تحریک لبیک کا دھرنا 9 ویں روز بھی جاری رہا، شہریوں کی زندگی اجیرن، کاروبار ٹھپ

11 اپریل 2018

لاہور(صباح نیوز) مذہبی تنظیم تحریک لبیک یارسول اللہ کی جانب سے لاہور میں دھرنامنگل کو 9 ویں روز بھی جاری رہا جس کی وجہ سے جہاں عوام کو مشکلات کا سامنا ہے وہیں داتا دربار سے ملحقہ سڑکوں پر ٹریفک کے مسائل جوں کے توں رہے اور کاروبار ٹھپ ہو گیا۔ احتجاجی دھرنے کے باعث لوئرمال کا بڑا حصہ کینٹینرز اور بیرئیرز لگا کر بندکیا گیا ہے جس کی وجہ سے ناصر باغ سے مینار پاکستان کی جانب آنے اور جانے والی سڑک ٹریفک کے لیے بند ہے۔ سکول، کالجز اور دفاتر آنے جانے والوں کی زندگی اجیرن بنی ہوئی ہے، ناصر باغ سے ٹریفک عبدالقادر جیلانی روڈ کی طرف موڑ دی جاتی ہے جبکہ سرکلر روڈ بھی بھاٹی چوک سے بند کیا گیا ہے، پیدل آنے جانے والوں کوگرمی میں کئی کئی کلومیٹرپیدل سفرکرنا پڑتا ہے، شہری پریشان ہیں کہ دھرنا کب ختم ہوگا اوران کی مشکل آسان ہوگی۔ دھرنے کے باعث کربلا گامے شاہ کے قریب فرنیچرکی کئی دکانیں اورمعروف بیکری والوں کا کاروبارٹھپ پڑا ہے۔ ان مشکلات کے خاتمے کا فیصلہ 12 اپریل کو دھرنے والوں کی طرف سے دی گئی ڈیڈلائن ختم ہونے کے بعد ہی ہوگا۔
دھرنا جاری