ایم کیو ایم چھوڑ کر جانے والے کس مینڈیٹ سے اسمبلی میں بیٹھے ہیں‘ خواجہ اظہار

11 اپریل 2018

کراچی (وقائع نگار) ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر رہنما خواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ فلور کراسنگ کرنیوالے ارکان اپنی قراردادیں تحریکیں لارہے ہیں الیکشن کمیشن فلور کراسنگ کرنیوالوں کا فیصلہ کرے، آج ایم کیو ایم کو چھوڑ کر جانے والے کس مینڈیٹ سے اسمبلی میں بیٹھے ہیں۔ کراچی سمیت سندھ کے شہری علاقے کے لوگ سب دیکھ رہے ہیں، کچھ بھی ہو جائے ووٹ پتنگ کا ہے،سندھ اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ اظہار الحسن کا کہنا تھا کہ بیشتر ارکان موجود ہی نہیں زیادہ تر قراردادیں الیکشن مہم لگتی ہیں کل سے چلنے والا اجلاس حکومت کیلئے باعث تشویش ہونا چاہئے، ایوان میں صوبائیت کو فروغ دیا گیا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وفاداریاں بدلنے والے مراعات چھوڑ کر نہیں گئے انکی آنے والی مراعات پر بھی نظر ہے۔ آج ایم کیو ایم کو چھوڑ کر جانے والے کس مینڈیٹ سے اسمبلی میں بیٹھے ہیں۔ فلور کراسنگ کرنے والے ارکان اپنی قراردادیں تحریکیں بھی لا رہے ہیں، الیکشن کمیشن فلورکراسنگ کرنے والوں کا فیصلہ کرے۔خواجہ اظہار کا مزید کہنا تھا کہ مصنوعی طریقے سے اپوزیشن میں دھڑے بندی کرنا حکومت کو مضبوط کرنا ہے، دو دن سے اپوزیشن لیڈر کو تبدیل کرنے کی باتیں ہو رہی ہیں، یہ سیٹ میری نہیں میری پارٹی کی امانت ہے، ہم پارٹی کے کارکن ہیں اور صرف پارٹی کی بات کریں گے، جو زیادتیاں ہورہی ہیں کراچی سمیت سندھ کے شہری علاقے کے لوگ سب دیکھ رہے ہیں، کچھ بھی ہو جائے ووٹ پتنگ کا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت بتائے کہ کتے کی قبر کا سندھ سے جانے کا راستہ کیوں نہیں ہے، ایوان میں صوبائیت کو فروغ دیا گیا ہے۔
خواجہ اظہار