بچیوں سے زیادتی کرنے والوں کو اسلامی قوانین کے تحت سزا دی جائے‘ ثروت قادری

11 اپریل 2018

کراچی ( نیوزرپورٹر) سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ روشن خیالی اور لبرل ازم نے بچیوں کے مستقبل اور زندگیوںکو داﺅ پر لگا دیا ہے ،زینب زیادتی کیس والدین ابھی بھلا بھی نہیں پائے تھے کہ چیچہ وطنی میں8سالہ ذہنی معذور بچی کا زیادتی کا نشانہ بناکر زندہ جلا دیا گیا جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ،بچیوں سے زیادتی اور قتل کے واقعات میں اضافہ ہورہا ہے ،حکومت ،پارلیمنٹ اور عدلیہ بچیوں کے تحفظ کی بجائے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں ،اسلامی قوانین کے تحت بچیوں سے زیادتی اور قتل کرنے والوں کو ہنگامی بنیادوں پر سزا دی جاتی تو ایسے واقعات رونما نہیں ہوتے ، مطالبہ کرتے ہیں8سالہ ذہنی معذوز بچی نور فاطمہ سے زیادتی کے ملزمان کو گرفتار کرکے فوری سزا دیجائے ،ایسے واقعات ملک کی بدنامی اور خوف کی فضاءبن رہے ہیں ،شرمناک واقعات کی روک تھام کےلئے ہرممکن اقدامات کئے جائیں اگر حکمرانوں نے زیادتی کے مجرموں کے خلاف گھیرا تنگ نہیں کیا تو پھر عوام ایسے مجرموں کو خود سزا دینا شروع ہوجائینگے ،حکومت کو ہر حال میں رٹ قائم کرکے زیادتی کے مجرموں کو انجام تک پہنچا نا ہوگا ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے چیچہ وطنی زیادتی کے بعد زندہ جلادینے والی بچی کے انسانیت سوز ظلمکی شدید مذمت اور دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کیا ۔
ثروت قادری