امریکہ بھارت کو علاقے کا تھانیدار بنانے کیلئے پاکستانی حکمرانوں پر دباﺅ ڈال رہا ہے:منور حسن

10 جون 2013
امریکہ بھارت کو علاقے کا تھانیدار بنانے کیلئے پاکستانی حکمرانوں پر دباﺅ ڈال رہا ہے:منور حسن

لاہور(خصوصی نامہ نگار) جماعت اسلامی کے امیر سید منور حسن نے کہا ہے کہ نواز شریف کو فوری طور پر بھارت کو پسندیدہ ترین ملک قرار دینے اور کشمیر پر بریک تھرو سے متعلق امریکی نائب وزیر خارجہ رابرٹ بلیک کے بیان کی وضاحت کرنی چاہئے ، امریکی عہدیداروں کے بیانات سے معلوم ہوتا ہے کہ امریکہ بھارت کو علاقے کا تھانیدار بنانے کیلئے نو منتخب حکمرانوں پر مسلسل دباﺅ ڈال رہا ہے۔ قوم کو اندھیرے میں رکھ کر وزیراعظم نے بھارتی بالادستی قبول کرنے اور کشمیر پر قومی موقف سے پیچھے ہٹنے کی کوشش کی تو اپنے پاﺅں پر کلہاڑی ماریں گے اور ان کا یہ اقدام عوامی مینڈیٹ کے خلاف ہو گا۔ مسئلہ کشمیر اور بھارت کی آبی جارحیت کو پس پشت ڈال کر بھارت کے ساتھ غیر مشروط دوستی اور اسے پسندیدہ ملک قرار دینا ملک و قوم کے مفادات کو قربان کرنے کے مترادف ہے۔ ۔قوم حکمرانوں کو مسئلہ کشمیر پر کسی یو ٹرن اورازلی دشمن بھارت کو سرپر بٹھا نے کی ہر گز اجازت نہیں دے گی۔ کشمیر ی تکمیل پاکستان اور ہماری شہ رگ کو دشمن کے خونی پنجے سے چھڑانے کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ میاں نوازشریف مسئلہ کشمیر پر کمزور ی دکھائیں نہ بھارت کی چالوں میں آکر قومی موقف سے پیچھے ہٹیں۔ منصورہ سے جاری ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ ہم مذاکرات کے ذریعے مسائل حل کرنے کے مخالف نہیں لیکن زمینی حقائق یہ ہیں کہ بھارت مذاکرت صرف اپنے مفادت کے لیے کرتاہے وہ مسائل حل کرنے میں کبھی سنجیدہ نہیں رہا۔ انہوں نے کہاکہ 66سال سے بھار ت پاکستان کو صفحہ ہستی سے مٹانے کی مکروہ کوششوں میں مصروف ہے اور اب تک اس نے پاکستان کو ایک آزاد اور خود مختار ملک کی حیثیت سے تسلیم نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر اور پانی کی قیمت پر بھارت سے دوستی کسی صورت قبول نہیں کی جاسکتی۔