گھیا کد و کھا نسی اور د مہ کے ا مر ا ض کو کنٹرو ل کر نے میں مفید ہے: ماہرین

10 جون 2013

سرگودھا (اے پی پی) زرعی ماہرین کے مطابق گھیا کدو موسم گرما کی ایک اہم اور انتہائی مفید سبزی ہے۔ غذائی اعتبار سے گھیا کدو میں نشاستہ چکنا ئی کلشیم آئرن فاسفورس اور حیاتین کے اجزا پائے جاتے ہیں گھیا کدو کی تاثیر ٹھنڈی ہے یہ شوگر بلڈ پریشر دل جگر پھپھیڑوں کھانسی اور دمہ کے امراض کو کنٹرول کرنے میں بہت مفید ہے میدانی علاقوں میں عام طور پر گھیا کدو کی تین فصلیں کاشت کی جاتی ہے پہلی فصل فروری تا مارچ دوسری فصل جولائی تا اگست جبکہ تیسری فصل اکتوبر کے آخر پر نومبر کے شروع میں کاشت کی جاتی ہے۔ گھیا کدو کیلئے زرخیز میرا زمین جس میں نامیاتی مادہ وافر مقدار میں موجود ہو اور پانی دیر تک جذب کرنے کی صلاحیت رکھتی ہو موزوں تھور اورسیم زدہ زمینوں میں اسے کاشت نہیں کرنا چاہئے بوائی سے ایک ماہ پہلے 10سے 15ٹن گوبر کی گلی سڑی کھاد ڈ ال کر زمین میں اچھی طرح ملا دیں اور بعد میں کچھی روانی کر دیں اور وتر آنے پر زمین ہل اور سہاگہ چلائیں بوائی کے وقت تین سے چار بار ہل اور سہاگہ چلائیں تاکہ زمین نرم اور بھربھری ہو جائے پہلا پانی کاشت کے فوراً بعد لگا دیا جائے اور خیال رکھیں کہ پانی بیج کی سطح سے اوپر نہ آئے۔