2ماہ میں مزید ایک لاکھ 80ہزار غیرملکی کارکن سعودی عرب سے چلے گئے

10 جون 2013
2ماہ میں مزید ایک لاکھ 80ہزار غیرملکی کارکن سعودی عرب سے چلے گئے

ریاض (اے ایف پی) گذشتہ دو ماہ کے دوران سعودی عرب میں غیرقانونی طور پر مقیم مزید ایک لاکھ 80ہزار ورکرز ملک سے چلے گئے اس طرح رواں سال کے دوران مجموعی طور پر 3لاکھ 80ہزار غیرملکی سعودی عرب چھوڑ چکے ہیں۔ سعودی حکومت نے ملک میں غیرقانونی طور پر مقیم غیرملکی کارکنوں کو ایمنسٹی سکیم کے تحت اس بات کی اجازت دی ہے کہ وہ مقررہ مدت میں اپنا قیام قانونی بنانے کیلئے تمام دستاویزات تیار کرا لیں یا پھر کسی جرمانہ کے بغیر سعودی عرب سے چلے جائیں۔ سعودی عرب کے اخبار عکاز کی رپورٹ کے مطابق محکمہ پاسپورٹ کے ترجمان نے کہا ہے کہ 3جولائی کو ایمنسٹی کی مدت گزرنے کے بعد امیگریشن قوانین کی خلاف ورزی کرنیوالوں کو سزاﺅں کا سامنا کرنا پڑے گا اور انہیں دو سال تک قید اور ایک لاکھ ریال تک جرمانہ کی سزا دی جا سکے گی۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق سعودی عرب میں کام کرنیوالے غیرملکیوں کی تعداد 80لاکھ ہے، اقتصادی ماہرین کے مطابق سعودی عرب میں مزید 20لاکھ بیرونی ورکرز رجسٹریشن کے بغیر مقیم ہیں۔