پاک ایران گیس منصوبہ جاری رکھنے کا عزم

10 جون 2013

پاکستان ایران گیس پائپ لائن منصوبہ جاری رکھنا حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔سرتاج عزیز اس منصوبے کو ختم نہیں کرینگے فی الحال بھارت کو پسندیدہ ملک قرار دینے کا کوئی فیصلہ نہیں کیا اس بارے میں اعلیٰ سطح پر بات چیت جاری ہے۔ وفاقی وزیر مملکت سرتاج عزیز نے جرمنی وزیر خارجہ کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان ایران گیس معاہدے کے بارے میں تمام خدشات مسترد کردیا ہے اور کہا ہے کہ یہ معاہدہ برقرار رہے گا۔ایران سے اس معاہدے کی تکمیل کی صورت میں نہ صرف ملک میں گیس کی قلت میں کمی ہوگی بلکہ اگر ایران یک طرف سے 7ہزار میگا واٹ بجلی کی فروخت کی پیشکش بھی قبول کرلی جائے تو بجلی کے جاری بحران میں بھی کمی لائی جاسکتی ہے۔اسلئے حکومت ایران سے گیس معاہدے پر ہر قسم کے دباﺅ کو مسترد کرتے ہوئے ایران کی بجلی کی خریداری کی پیشکش سے بھی فائدہ اٹھائے تاکہ عوام کو بجلی اور گیس کے بد ترین بحران سے نجات مل سکے۔