A PHP Error was encountered

Severity: Notice

Message: Undefined index: category_data

Filename: frontend_ver3/Templating_engine.php

Line Number: 35

پنجاب میں شدید بارشیں: نالوں میں طغیانی متعدد دیہات زیرآب‘ چھتیں گرنے سے ساس بہو سمیت تین جاں بحق

10 اگست 2011
لاہور+ گوجرانوالہ+ موڑکھنڈا+ واہنڈو (نمائندہ خصوصی+ نامہ نگاران) پنجاب کے بالائی علاقوں میں بارش کے بعد دریائے راوی اور چناب کے قریب بہنے والے ندی نالوں میں طغیانی آ گئی جس کے بعد متعدد علاقے زیرآب آ گئے جبکہ پانی قریبی دیہات میں داخل ہو گیا، نالہ ڈیک کا پل گرنے سے ضلع گوجرانوالہ، شیخوپورہ اور نارووال کے کئی علاقوں کا رابطہ منقطع ہو گیا۔ موڑکھنڈا اور پسرور میں چھتیں گرنے سے ساس ، بہو سمیت 3خواتین جاں بحق ہو گئیں جبکہ لاہور میں 9افراد زخمی ہو گئے۔ دریائے کابل اور سوات میں نچلے درجے کا سیلاب ہے۔ سندھ کے مختلف شہروں میں بارش سے موسم خوشگوار ہو گیا۔ فلڈ کنٹرول سنٹر کے مطابق گزشتہ صبح اچانک پانی کی سطح تیزی سے بلند ہوگئی اور اس میں مزید اضافے کا امکان ہے، پانی کی سطح میں اضافے سے نالوں کے قریب12 دیہات میں پانی داخل ہوگیا۔ محکمہ موسمیات نے آئندہ چوبیس گھنٹوں میں اسلام آباد، پنجاب ، خیبر پی کے، شمال مشرقی بلوچستان اور سندھ میں بھی تیز ہوائیں چلنے اور گرج چمک کے ساتھ بارش کی پیش گوئی کی گئی ہے۔ واہنڈو سے نامہ نگار کے مطابق نالہ ڈیک کا پل بھاری ٹریفک کی وجہ سے ٹوٹ گیا جس سے واہنڈو کے تقریباً 100دیہات کا ضلع شیخوپورہ اور ضلع نارووال کے علاقوں سے رابطہ منقطع ہو گیا۔ موڑکھنڈا سے نامہ نگار کے مطابق نواحی گاﺅں ٹھٹھہ باہمنی کے مزدور محمد منشاءکا بارش کی وجہ سے کچا مکان گر گیا جس سے اس کی بیوی زینب بی بی اور بہو ملبے تلے دب کر موقع پر ہی دم توڑ گئی۔ لاہور میں چھتیں گرنے کے واقعات پیر غازی روڈ، شمالی چھاﺅنی، چوہنگ، ساندہ، گلشن راوی ،اچھرہ، سمن آباد اور باغبانپورہ میں پیش آئے۔
نالے/ طغیانی