اورکزئی ایجنسی : فورسز سے جھڑپ ‘ بمباری ‘ 25 شدت پسند مارے گئے

10 اپریل 2013

اورکزئی + راولپنڈی (وقت نیوز + اے پی پی + آن لائن) اورکزئی ایجنسی میں سکیورٹی فورسز کی بمباری اور جھڑپ میں 25 شدت پسند جاں بحق ہو گئے جبکہ 2 افسروں سمیت 10 اہلکار بھی زخمی ہو گئے ۔ آئی ایس پی آر کے ترجمان کا کہنا ہے کہ وادی تیراہ میں آپریشن جاری ہے اب تک 23 سکیورٹی اہلکار اور 110 شدت پسند جاں بحق ہو چکے ہیں جبکہ شدت پسندوں کے کئی ٹھکانے بھی تباہ کر دئیے گئے ۔ پشاور کے علاقہ حیات آباد پر نامعلوم سمت سے 3 راکٹ فائر کئے گئے جس سے 7 افراد زخمی ہو گئے ۔ باڑہ میں کھلونا نما بم پھٹنے سے بچہ زخمی ہو گیا، تفصیلات کے مطابق لوئر اورکزئی کے علاقے ہندرہ میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر سکیورٹی فورسز نے بمباری کی۔ کارروائی میں 25 شدت پسند جاں بحق ہوئے۔ سکیورٹی فورسز نے مختلف علاقوں میں گن شپ ہیلی کاپٹروں سے شدت پسندوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا متعدد شدت پسند زخمی ہوگئے جبکہ انکے 2 ٹھکانے بھی تباہ کردئیے گئے ۔ سکےورٹی فورسز کی مختلف علاقوں میں پیش قدمی جاری ہے۔ جبکہ شدت پسندوں سے فورسز کی جھڑپ بھی ہوئی۔ آئی ایس پی آر کے ترجمان کے مطابق سکیورٹی فورسز کا وادی تیراہ میں شدت پسندوں کے خلاف آپریشن جاری ہے جس میں شدت پسندوں کے متعدد ٹھکانے تباہ اور 110 شدت پسندجاں بحق کر دیا گیا۔ آپریشن میں سکیورٹی فورسز کے 23 اہلکار بھی جاں بحق ہوئے۔ پشاور پولیس کے مطابق نامعلوم سمت سے فائر کئے گئے راکٹ گولے حیات آباد کے سیکٹر ایف 9 کی مختلف سٹریٹس پر گرے۔ زوردار دھماکوں سے سات افراد زخی ہو گئے اور قریبی مکانات اور دو گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا جبکہ میاں اقبال چوک میں دھماکے سے سی ڈیز کی 2 دکانوں کو نقصان بھی پہنچا۔