کراچی میں فائرنگ، ایس ایچ او جاں بحق، بااثر افراد کا پولیس پارٹی پر تشدد

10 اپریل 2013

کراچی (نوائے وقت رپورٹ) ایچ او پریڈی آغا اسد جاں بحق ہو گئے ہیں۔ صدر کے بوہری بازار میں نامعلوم افراد کی جانب سے ایس ایچ او پریڈی آغا اسد کی گاڑی پر فائرنگ کی گئی، فائرنگ کے بعد حملہ آور فرار ہو گئے، گاڑی پر حملے میں ایس ایچ او پریڈی آغا اسد شدید زخمی ہوئے جنہیں سول ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔ علاوہ ازیں لیاقت آباد میں فائرنگ کرکے سی آئی ڈی اہلکار کو زخمی کر دیا گیا۔ علاوہ ازیں گزری میں پولیس اہل کاروں پر بااثر افراد تشدد کرکے فرار ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق گزری میں 2گروپوں میں جھگڑا ہوا، پولیس نے دونوں کو تھانے چلنے کا کہا تو بااثر ملزمان نے اسلحہ نکال لیا اور پولیس پارٹی پر تشددکیا۔ ڈاکٹروں کے مطابق ایس ایچ او سہیل احمد خان اور تین پولیس اہلکارفرید، دلاور، محمد اسلم پرڈنڈوں اور اسلحے کے بٹوں سے تشدد کیا گیا۔ ایس ایچ او پر تشدد کرنے پر سردار ثنا اللہ زہری کے 5گارڈز اور کیپٹن (ر)شہریاردرانی کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں آئی جی سندھ شاہد ندیم کی زیرصدارت اہم اجلاس ہوا جس میں انتخابات کے دوران سکیورٹی کی صورت حال اور امن و امان کی مجموعی صورت حال کا جائزہ لیا گیا۔ نجی ٹی وی کے مطابق آئی جی سندھ شاہد ندیم نے کہاکہ پولیس رضاکاروں اور ریٹائرڈ اہلکاروں کو انتخابات کے دوران تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔