لاہور چیمبر نے معاشی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے سفیروں کو روڈ میپ دیدیا

10 اپریل 2013
لاہور چیمبر نے معاشی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے سفیروں کو روڈ میپ دیدیا

لاہور (کامرس رپورٹر ) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے پاکستان کے تھائی لینڈ، ازبکستان اور کمبوڈیا میں سفیروں کو ایک روڈ میپ دیا تاکہ وہ پاکستانی تاجروں کے بین الاقوامی تعلقات کے استحکام، ملک کی بیرونی تجارت بڑھانے اور معاشی سرگرمیوں کے فروغ کے لیے بہتر انداز میں کام کرسکیں۔ لاہور چیمبر میں ایک اجلاس کے دوران تھائی لینڈ کے لیے پاکستانی سفیر سہیل خان، ازبکستان کے لیے پاکستانی سفیر ریاض حسین بخاری اور کمبوڈیا کے لیے پاکستانی سفیر امجد علی شیرکو ایسی قابل عمل تجاویز دی گئیں جو پاکستانی برآمدات کے فروغ میں اہم کردار ادا کرسکتی ہیں۔ اس موقع پر لاہور چیمبر کے صدر فاروق افتخار، سینئر نائب صدر عرفان اقبال شیخ، نائب صدر میاں ابوذر شاد، سابق سینئر نائب صدر سہیل لاشاری، سابق نائب صدر آفتاب احمد وہرہ ، ایگزیکٹو کمیٹی ارکان میاں زاہد جاوید، مدثر مسعود چودھری اور حسنین رضا مرزا نے کہا کہ تھائی لینڈ، ازبکستان اور کمبوڈیا اربوں ڈالر کی اشیاءمہنگے داموں دیگر ممالک سے درآمد کرتے ہیں حالانکہ پاکستان یہی اشیاءانہیں سستے داموں فراہم کرسکتا ہے۔انہو ںنے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے اور زرعی مصنوعات تھائی لینڈ کو برآمد کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے۔ انہو ں نے سفیروں پر زور دیا کہ وہ پاکستان کے ٹیکسٹائل مصنوعات، پھلوں و سبزیوں کی برآمدات کو فروغ دینے کے لیے اقدامات اٹھائیں۔ انہوں نے کہا کہ تھائی لینڈ میں بڑی تعداد میں مسلمان رہتے ہیں لہذا پاکستان تھائی لینڈ کو حلال گوشت اور حلال خوراک برآمد کرسکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ازبکستان سنٹرل ایشیا کے وسط میں واقع ہے اور تجار ت کے حوالے سے پاکستان کے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے کیونکہ یہ یورپ کے ساتھ تجارت میں بھی مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کمبوڈیا کی تعمیراتی میٹریل، مشینری، موٹر وہیکلز ،فارماسیوٹیکل مصنوعات اور سرجیکل آلات کی ضروریات پوری کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔