الیکشن ٹربیونلز نے 17 امیدواروں کی اپیلیں مسترد‘ 3 کی منظور کر لیں‘ 2 پر فیصلہ محفوظ

10 اپریل 2013

لاہور+ راولپنڈی (وقائع نگار خصوصی+ نوائے وقت نیوز+ ایجنسیاں) لاہور ہائیکورٹ کے الیکشن ٹربیونلز نے ریٹرننگ افسروں کے فیصلوں کے خلاف 17 امیدواروں کی اپیلیں مسترد اور 3کی اپیلیںمنظور کر لیں۔ لاہور ہائیکورٹ کے دو الیکشن ٹربیونلز ریٹرننگ افسروں کے فیصلوں کے خلاف اپیلوں کی سماعت کر رہے ہیں۔ امیدواروں کی جانب سے 10 اپریل تک اپیلیں دائر کی جا سکیں گی جبکہ الیکشن ٹربیونل 17 اپریل تک ان اپیلوں پر فیصلے سنائیں گے۔ ہائیکورٹ کے جسٹس ناصر سعید شیخ کی سربراہی میں دو رکنی الیکشن ٹربیونل نے این اے 166 سے پروفیسر محمد مظفر، این اے 106سے عظمیٰ شوکت، این اے 193سے ملک غضنفر سمیت کل 17 امیدواروں کی اپیلیں مسترد اور حلقہ پی پی 91سے اظہر محمود اور پی پی 92 سے محمد نواز چوہان سمیت کل تین امیدواروںکی اپیلیں منظور کرتے ہوئے ریٹرننگ افسروں کے فیصلے کالعدم قرار دے دئیے۔ الیکشن ٹربیونل نے دو امیدواروں کی اپیلوں پر فیصلہ محفوظ کر لیا جبکہ 14امیدواروں کی اپیلوں پر متعلقہ حلقوں کے ریٹرننگ افسروں کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لئے۔ تحریک انصاف کے رہنما عبد العلیم خان کے حلقہ این اے 122سے کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف بھی اپیل دائر کر دی گئی ہے جبکہ پیپلز پارٹی کے امتیاز صفدر وڑائچ نے حلقہ این اے 98سے اپنے کاغذات مسترد کئے جانے کے خلاف بھی اپیل دائر کر دی گئی ہے۔ الیکشن ٹربیونل نے سابق صدر پرویز مشرف کے دست راست اور آئی بی کے سابق سربراہ اعجاز شاہ کے کاغذات نامزدگی منظور کئے جانے کے خلاف دائر اپیل واپس لئے جانے کی بنا پر نمٹا دی۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس خواجہ امتیاز کی سربراہی میں الیکشن ٹربیونل نے اپیل کی سماعت کی ۔ علاوہ ازیں مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں نوازشریف کے حلقہ این اے 120 سے کاغذات نامزدگی منظور ہونے کیخلاف الیکشن ٹربیونل میں دائر درخواست کر دی گئی۔ جس کی سماعت آج ہو گی۔ نوائے وقت نیوز کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں الیکشن ٹریبونل نے چا ر امیدواروں کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کا ریٹرننگ افسروں کا فیصلہ برقرار رکھا ہے، الیکشن ٹریبونل میں این اے 95 سے مسلم لیگ (ن) کے امیدوار عثمان ابراہیم کی اپیل کی سماعت ہوئی۔ ریٹرننگ افسر نے اعتراض عائد کیا تھا کہ عثمان ابراہیم نے آمدنی اور اصل اثاثے ظاہر نہیں کئے تھے۔ ٹریبونل نے کاغذات نامزدگی مسترد کر نے کا ریٹرننگ آفیسر کا فیصلہ برقرار رکھا۔ ٹربیونل نے این اے 166 سے پروفیسر محمد مظفر نور، پی پی 193 سے ملک غضنفر کھوکھر اور این اے 106 سے عظمٰی شوکت کی اپیلیں بھی مسترد کر دیں۔ ادھر حلقہ این اے 178سے تحریک انصاف کے امیدوار شیخ مظہر حسین کے کاغذات نامزدگی منظور کر لئے گئے ہیں۔ علاوہ ازیں الیکشن ٹربیونل میں این اے 136ننکانہ صاحب سے بلال احمد ورک کے کاغذات نامزدگی منظور کرنے کے خلاف دائر اپیل کی سماعت آج ہو گی۔ محمد سرور کی طرف سے دائر اپیل میں کہا گیا ہے کہ بلال ورک نے 2003ءمیں جعلی ڈگری پر الیکشن میں حصہ لیا۔ علاوہ ازیں عدالتی ذرائع کے مطابق اب تک لاہور ہائیکورٹ کی پرنسپل سیٹ پر دائر اپیلوں کی تعداد 155ہو چکی ہے جبکہ لاہور ہائیکورٹ کے راولپنڈی بنچ میں 34، ملتان بنچ میں 56اور بہاولپور بنچ میں 75اپیلیں دائر ہوئی ہیں۔ علاوہ ازیں این اے 48سے پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کے خلاف اپیل کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے پرویز مشرف کے وکیل کو اپیل میں مزید تفصیلات دینے کی ہدایت کی ۔ این این آئی کے مطابق جسٹس رﺅف اے شیخ اور جسٹس مامون الرشید پر مشتمل دو رکنی الیکشن ٹربیونل نے راجہ پرویز اشرف، چودھری نثار علی خان، امان اللہ خان نیازی سمیت دیگر امیدواروں کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے کیخلاف اپیلوں کو سماعت کیلئے منظور کرتے ریٹرننگ آفیسرز سے کل جمعرات کے روز ریکارڈ سمیت جواب طلب کر لیا ہے۔کہیں کاغذات نامزدگی مسترد ہونے پر اپیلیں جبکہ کہیں منظور ہونے پر اپیلیں کی گئی ہیں۔ نجی ٹی وی کے مطابق آج اپیلیں کرنے کا آخری دن ہے۔