نورا کشتیاں ڈرامے بازیاں۔۔۔

10 اپریل 2013

مکرمی!اللہ بخشے جانے والی حکومت اور فرینڈ لی اپوزیشنوں کو جنہوں نے پانچ سال اول سے آخری دن تک عوام کو مصروف رکھنے کیلئے طرح طرح کی نورا کشتیاں اور ڈرامے بازیاں کیں۔ طرح طرح کے بہروپ دھارے۔عوام خوش تھے کہ اب ان کے مسائل حل ہو جائیں گے بجلی کا بحران، گیس کی لوڈ شیڈنگ اور پانی کا بحران ختم ہو جائےگا۔ صنعتوں کی بحالی سے بے روز گاری ختم ہو جائے گی۔ قومی ادارے بحال اور ریلوے چل پڑے گی لیکن جب مرکزی اور صوبائی حکومتیں ٹوٹ گئیں تو پرنٹ میڈیا اور الیکٹرونک میڈیا نے پانچ سالہ کارکردگی عوام کے سامنے پیش کی تو پتہ چلا اتنا نقصان ملک کو ہندوستان یا ڈاکوﺅں اور لٹیروں نے نہیں پہنچایا۔ جتنا نقصان قوم کے ان نمائندوں رہبروں ہمدردوں اور محسنوں نے اپوزیشن اور حکومتی بنچوں پر بیٹھ کر پہنچایا ہے۔(مرزا عبدالمجید ہمایوں نزد بیگم برادرز گلی ناز سنیما ٹوبہ)