ہارس ٹریڈنگ الزام کیس، پشاور کی عدالت کا عمران خان کو دوبارہ نوٹس

Sep 09, 2018

پشاور (صباح نیوز) پشاور کی ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت نے تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی سابق رکن صوبائی اسمبلی فوزیہ بی بی کی درخواست پر پارٹی چیئرمین اور موجودہ وزیراعظم عمران خان کے خلاف دوبارہ نوٹس جاری کر دیا۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شاہ ولی اللہ نے بی بی فوزیہ کی درخواست پر ہرجانہ نوٹس پر سماعت کی اور عمران خان کو دوبارہ نوٹس جاری کر دیا۔ عدالت نے عمران خان سے 29 ستمبر کو جواب طلب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جواب جمع نہ ہونے کی صورت میں اخبار میں اشتہار دیا جائے گا۔ ایڈیشنل اینڈ ڈسٹرکٹ سیشن جج شاہ ولی اللہ نے کہا کہ جواب جمع نہ کرنے پر ہرجانہ نوٹس پر یکطرفہ کارروائی ہوگی۔ یاد رہے کہ رواں سال مارچ میں منعقدہ سینٹ انتخابات کے بعد 18 اپریل کو پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے ایک پریس کانفرنس میں مبینہ طورپر ہارس ٹریڈنگ میں ملوث 20 پارٹی اراکین کو شوکاز نوٹس جاری کرنے کا اعلان کیا تھا۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ ان میں سے ہر رکن نے ووٹ فروخت کر کے اس کے تقدس کو مجروح کرنے کے عوض 4 چار کروڑ روپے لئے ہیں۔ بعدازاں ان میں سے کئی ارکان نے عمران خان کو ہتک عزت کا نوٹس بھجوا دیا تھا۔ فوزیہ بی بی نے بھی عمران خان کے خلاف 50 کروڑ ہرجانے کا نوٹس دائر کیا تھا جس پر عدالت کی جانب سے اس سے قبل بھی نوٹس جاری کیا گیا تھا۔

دوبارہ نوٹس

مزیدخبریں