پانامہ لیکس میں نوازشریف کا نام نہیں تھا‘ دانیال عزیز

09 ستمبر 2017

اسلام آباد (نامہ نگار) وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز نے کہا ہے کہ پانامہ لیکس میں نواز شریف کا نام نہیں تھا، یہ پانامہ کیس شروع دن سے ہی غیرسنجیدہ تھا، پانامہ کیس میںکارروائی کسی ایک خاندان کے خلاف نہیں بلکہ عوام کے ووٹ کے تقدس کو پامال کیا جارہا ہے۔ نواز شریف نے استثنی کے باوجود عدالتوں کے سامنے سرنڈر کیا، پانامہ کیس میں سزا پہلے دی گئی کیس آج دائر ہو رہا ہے، پانامہ کیس میں جو ہمیشہ سے ہوتا آرہا ہے وہی آگے بھیہوتا نظر آرہا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی آئی ڈی اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ دانیال عزیز نے کہا کہ نیب عدالت میں 28 جولائی کے فیصلے کے حوالے سے ریفرنسز جمع ہو گئے ہیں۔ 20 اپریل کے فیصلے میں مریم نواز کانام تک نہیں تھا جسٹس کھوسہ جنہوں نے اپنا اختلافی فیصلہ لکھا انہوں نے بھی کہا کہ مریم نواز ڈیپنڈنٹ نہیں ہے آج ان کے خلاف ریفرنس دائر ہو گیا ہے انہوں نے کہا کہ ہماری درخواست پر عدالت کو جے آئی ٹی پر انکوائری آرڈر کرنا پڑی۔پانامہ کیس عجیب و غریب موڑوں سے نکلتا ہوا آیا ہے تمام طے شدہ معاملات تھے۔ تینوں پٹیشنرز کے وکلا نے خود تسلیم کیا کہ پانامہ میں نواز شریف کا نام ہی نہیں ہے اقامہ کا معاملہ تو کسی پٹیشن کا حصہ ہی نہیں تھا ۔انہوں نے کہا کہ والیم 10کے متعلق پروپیگنڈا کیا گیاوالیم ٹین کے متعلق تاخیر اسی لیے کی گئی تاکہ اس میں ڈالنے کے لیے کوئی کاغذ تو آجائے۔ پہلے دن سے صاف پیٹرن نظر آرہا تھا آج بھی ایڈمنسٹریٹر جج نے یہی کہا ہے کہ ریفرنسز نامکمل ہیں۔ سارے قانونی ماہرین کہہ رہے ہیں کہ یہ کوئی عجوبہ ہوا ہے انہوں نے کہا کہ بلانے کے باوجود عمران خان سپریم کورٹ اور الیکشن کمیشن پیش نہیں ہو رہے، عمران خان کے وکلا نے خود تسلیم کیا ہے کہ نیازی سروسز موجود تھی، فارن فنڈنگ ہوئی ہے جہانگیر ترین نے عدالت میں لکھ کر دیا ان کے ملازموں کے نام پر کمپنیاں تھیںعمران خان نے الیکشن کمیشن ،سپریم کورٹ اور انسداد دہشتگردی کی عدالت میں اقرار جرم کیا ہے لیکن کچھ نہیں ہو رہا اور ادھر کچھ بھی نہیں پھر بھی سزا دے دی گئی ہے۔
ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ تمام تجربات، انجکشن اور ڈرپوںکے باوجود نواز لیگ توانا کھڑی ہے، یہ کارروائی کسی ایک خاندان کے خلاف نہیں بلکہ عوام کے خلاف ہے ان کے ووٹ کے تقدس کو پامال کیا جارہا ہے۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ نیب میں آصف علی زرداری کا کیس ٹرائل کے بعد ختم نہیں ہوا بلکہ اس کی وجہ یہ ہے کہ نیب کے اصل کاغذات ہی غائب کر دیئے گئے اس پر تو کوئی جے آئی ٹی نہیں بنی ہم نے سنا تھا کہ کوئی شرجیل میمن اور ڈاکٹر عاصم کے کیس بھی تھے وہ کہاں گئے؟