سندھ اور خیبر پختونخوا میں عملی طور پر کوئی حکومت نہیں‘ علی اکبر گجر

09 ستمبر 2017

لاہور (خصوصی رپورٹر) مسلم لیگ(ن) سندھ کے نائب صدر علی اکبر گجر نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت اور پنجاب حکومت کو نشانہ بنانے والی سندھ حکومت اپنے گریبان میں منہ ڈالے، کراچی مےں نکاسی آب کے نالے بدستور قبضہ مافیاوں کے کنٹرول مےں اور شہر کے اکثر چوراہوں اور پلوں پر حکومتی سرپرستی مےں تجاوزات قائم ہیں جس نے کراچی شہر کو مقبوضہ بستی بنا ڈالا ہے وہ گزشتہ روز نوائے وقت سے گفتگو کر رہے تھے۔ انہوں نے مذید کہا کہ کراچی کے بلدیاتی مسائل کے حل پر فوری توجہ نہ دی گئی تو ملک کے سب سے بڑے شہر سے نقل مکانی کا طوفان اٹھنے کا خدشہ ہے انہوں نے کہا ہے کہ سندھ اور خےبر پختونخوا مےں عملاکوئی حکومت نہیں حکمران جماعتوں کے وڈےرے دونوں صوبوں کے وسائل لوٹ رہے ہےں کروڑوں روپوں کے ٹی وی اشتہارات مےں دکھائی جانے والی ترقی اور تبدیلی کا زمین پر کہیں وجود نہیں سندھ کی حالت موہن جو داڑو سے سے بھی بد تر ہوچکی ہے سندھ کے باشندے پختہ سڑکوں ، شاہراہوں اور صاف ستھرے شہروں کو ماضی کی داستان سمجھنے لگے ہےں ملک کا معاشی انجن کسی بھی وقت گندگی اور ابلتے گٹروں مےں ڈوب سکتا ہے سندھ کے وزرا کے آنے جانے کے لئے ان رستوں کا انتخاب کیا جاتا ہے جو صرف بادشاہوں اور سرداروں کے زےر استعمال ہےں کراچی کی کوئی سڑک اےسی نہیں بچی جس پر گٹر نہ ابل رہے ہوں ، شہر قائدکے نمازی گندگی اور ابلتے گٹروں کی وجہ قریبی مسجدوں مےں جانے سے بھی قاصر ہےں جبکہ سندھ کی حکمران کروڑوں روپے کے اشتہارات کے ذریعے ترقی کے جھوٹے راگ الاپ رہی ہے جبکہ دوسری طرف خےبر پختونخوا کے عوام کو ڈےنگی کے رحم و کرم پر چھوڑ کر صوبائی حکمران خےبر بےنک کے معاملات چھپانے کی کوششوں مےں مصروف ہےںایک سوال کے جواب میںعلی اکبر گجر نے کہا کہ 2013 کے عام انتخابات مےں سندھ اور خےبر پختونخوا کے عوام کے ساتھ بہت بڑا دھوکا گیا اور ان کے ووٹ کو ذاتی مفادات کے حصول کا ذریعہ بنا کر دونوں صوبوں کی حکمران جماعتوں نے عوام کے اعتماد کو ٹھےس پہنچائی ہے۔