پاک نیوی کا 52 واں یوم بحریہ قومی جوش و جذبے سے منایا گیا

09 ستمبر 2017

لاہور (خبرنگار) جنگ ستمبر 1965ء میں اپنے سے کئی گنا بڑے دشمن کیخلاف پاک بحریہ کے شاندار کارناموں کے اعتراف میںگذشتہ روز یوم بحریہ منایا گیا۔ یوم بحریہ ہر سال 8 ستمبر کو منایا جاتا ہے۔ دوارکا پر پاک بحریہ کے جنگی جہازوں کا جرأتمندانہ حملہ اور پاکستان نیوی کی آبدوز غازی کی ہندوستان کے پانیوں میں موجودگی کے خوف سے بھارتی بحری بیڑے کا کھلے سمندر میں نکلنے سے گریز اس دن کی اہم یادداشتیں ہیں۔ یوم دفاع پاکستان کو روایتی جوش و جذبے سے منانے اور شہداء اور غازیوں کی قربانیوں اور جرأت و بہادری کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے پاک بحریہ نے پی این ایس قاسم منوڑہ پر پاک بحریہ کی چار جہتی صلاحیتوں اور اثاثوں کا ایک شاندار مظاہرہ پیش کیا۔ گورنر سندھ محمد زبیر تقریب کے مہمان خصوصی تھے جبکہ چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل محمد ذکا اللہ بھی تقریب میں موجود تھے۔ پاک بحریہ کے اثاثوں اور اور صلاحیتوں کے اس خصوصی مظاہرے میں پاک بحریہ کے جہازوں اور ہیلی کاپٹرز کا فلائی پاسٹ، پاک بحریہ کے ہیلی کاپٹرز کی سرچ اینڈ ریسکیو آپریشن کی مشقیں، پیرا جمپ، فراگ مین اٹیک، ویسل بورڈ سرچ اینڈ سیزر آپریشن اور فاسٹ بوٹ ریکوری کی مشقوں کے مظاہرے شامل تھے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی نے 65 کی جنگ میں پاک بحریہ کے شاندار کارناموں کا ذکر کیا۔ تقریب میں سول اور ملٹری معززین اور جنگی ہیروز کے علاوہ شہداء کے لواحقین کی ایک بڑی تعداد بھی موجود تھی۔