پانامہ کیس شروع دن سے ہی غیر سنجیدہ تھا: دانیال عزیز

09 ستمبر 2017

اسلام آباد (نامہ نگار ) وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز نے کہا ہے کہ پانامہ کیس شروع دن سے ہی غیر سنجیدہ تھا، جے آئی ٹی رپورٹ کے والیم 10میں 27سوالات میں صرف 5کے جوابات موصول ہوئے ‘22سوالات کے جوابات ہی نہیں آئے، تاریخ کا پہلا کیس ہے جس میں سزا پہلے دیدی گئی اور کیس آج داخل کیا جارہا ہے ‘سپریم کورٹ کے نگرانی کرنے والے جج نے ایگزیکٹو بورڈ کے حکام کو اجلاس سے پہلے لاہور طلب کر لیا‘ کس طرح نیب آزادانہ طریقے سے تحقیقات مکمل کریگا یہ ایک سوالیہ نشان بن چکا ہے؟۔ عمران خان تو خود الیکشن کمیشن‘ سپریم کورٹ اور انسداد ہشت گردی کی خصوصی عدالت سے بھگوڑے ہیں ‘جہانگیر ترین کی کرپشن ثابت ہوئی ہے، کارروائی نہیں ہو پارہی۔ وہ جمعہ کی شام پی آئی ڈی میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ وفاقی وزیر دانیال عزیز نے کہا کہ 28جولائی کو سپریم کورٹ کے پانامہ لیکس کے حوالے سے فیصلے کی روشنی میں آج احتساب عدالتوں میں چار ریفرنسز لائے گئے ہیں‘ ایڈمنسٹریٹو جج نے ان ریفرنسز کو ادھورا قرار دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سو چ سمجھ کر نیب کے ریفرنسز دائرکرنے کی مدت رکھی گئی ہے‘ یہ مدت ساڑھے سات ہفتے بھی ہوسکتی تھی لیکن ضمنی الیکشن سے پہلے کی مدت رکھ دی گئی ہے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے میں جسٹس کھوسہ نے اختلافی نوٹ میں لکھ دیا ہے کہ مریم نواز ‘محمد نواز شریف کی ڈیپنڈنٹ نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان‘ سراج الحق اور شیخ رشید نے اپنی پٹیشن میں ہی اعتراف کیا ہے کہ نواز شریف کا پانامہ لیکس میں براہ راست کوئی تعلق نہیں ہے۔