نواز شریف، حسن، حسین،مریم اور کیپٹن صفدر کی نظرثانی درخواستوں کی سماعت 12ستمبر کو ہوگی

09 ستمبر 2017

اسلام آباد ( نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ آف پاکستان نے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف ان کے بچوںکی جانب سے 28 جولائی کے پانامہ پیپر لیکس کیس کے فیصلے پرنظرثانی کیلئے دائر مختلف درخواستوں کو12 ستمبر کوسماعت کیلئے مقررکردیاہے ، جسٹس اعجازافضل خان کی سربراہی میںجسٹس شیخ عظمت سعید اورجسٹس اعجازالاحسن پرمشتمل تین رکنی بنچ کیس کی سماعت کرے گا یادرہے کہ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے پانامہ فیصلے پر نظرثانی کیلئے تین متفرق درخواستیں دائرکی ہیں تینوں اپیلوں میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے پانامہ عدالتی فیصلہ پر عمل درآمد روکا جائے ، نظر ثانی اپیلوں کا فیصلہ ہونے تک نیب کیسز روکے جائیں ، نیب ریفرنس کی نگرانی کے لیئے تعینات کیئے جانے والے مانیٹرنگ جج جسٹس اعجاالاحسن کو ہٹاےا جائے ،سابقہ وزیر اعظم میاں نواز شریف نے15اگست کو جبکہ ان کے بچوں مریم نواز ، حسین نواز اور حسن نوازاور داماد کیپٹن (ر) صفدر کی جانب سے 25اگست کو پانامہ فیصلے کوعدالت عظمیٰ میں چیلنج کرتے ہوئے نظرثانی کی درخواستیں دائر کی گئی تھیں۔ نظر ثانی درخواستیں سماعت کے لیئے 12ستمبر بروزمنگل کومقررکی گئی ہیں۔ واضح رہے سپریم کورٹ کی جانب سے بنچ نمبر تین اور پانچ ڈی لسٹ کرکے چیف جسٹس نے تین رکنی پانامہ نظر ثانی بنچ تشکیل دےا ہے۔