پاکستان پوسٹ میں جامع اصلاحات کیلئے پیکج تشکیل

09 ستمبر 2017

اسلام آباد( نیوز ڈیسک ) پاکستان پوسٹ کو ایک خود انحصار ادارے میں تبدیل کرنے،سروسز کی فراہمی کو وسیع تر کرنے اوراسے ڈیجیٹل ٹیکنالوجی سے آراستہ کرنے کی غرض سے ادارے میں جامع اصلاحات کا ایک پیکج تشکیل دیا گیا ہے۔ادارے میں اصلاحاتی اقدامات پر عملدرآمد جا ری ہے جن سے ادارےپر خاطر خواہ نتائج برآمدہونا شروع ہو چکے ہیں۔پاکستان پوسٹ کی انتظامیہ وزیر اعظم پاکستان کے وژن کے عین مطابق اس اصلاحاتی ایجنڈے پر مکمل عملدرآمد کیلئے پرعزم ہے۔اس سلسلے میں موبائل منی سالوشن اینڈ لاجسٹکس پروجیکٹس کا آغاز پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت کیا جا رہا ہے۔پاکستان پوسٹ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ پالیسی بھی تشکیل دی جا چکی ہے جو موبائل منی سالوشن اور لاجسٹکس پارٹنرشپ کونئے تقاضوں کے مطابق چلائے گی۔پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کا یہ مرحلہ اپنے آخری مراحل میں ہے اور اس ضمن میں دعوت برائے تجاویز کا عمل بھی تیار کر لیا گیا ہے اور اسے متعلقہ پروکیورمنٹ کمیٹی نے منظور بھی کر لیا ہے جس پر عملی آغاز اور عملدرآمد سے موبائل منی سالوشن اینڈ پاکستان پوسٹ لاجسٹکس کمپنی کو اگلے دس برسوں کے دوران تقریباً112بلین روپے کا محاصل حاصل ہوگا۔پاکستان پوسٹ کے یہ اصلاحاتی اقدامات ڈیجیٹل فنانشل سروسز اینڈ لاجسٹکس تک ہی محدود نہیں بلکہ اس سلسلے میں بڑھتی ہوئی ضروریات کے پیش نظر بے شمار قلیل مدتی اقدامات بھی اٹھائے گئے ہیں جن سے مارکیٹ شیئرز میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا۔

مری بکل دے وچ چور ....

فاضل چیف جسٹس کے گذشتہ روز کے ریمارکس معنی خیز ہیں۔ کیا توہین عدالت کا مرتکب ...