ابتدائی طبّی امداد دینا سیکھ کر ہم قیمتی انسانی جانیں بچا سکتے ہیں

09 ستمبر 2017

اسلام آباد(نامہ نگار) سلائی سنٹر جی سیون ون کی 25 طالبات کو ہلالِ احمر پاکستان کی جانب سے ”فرسٹ ایڈ“ کی تربیت دی گئی۔ ایک روزہ تربیت کا باقاعدہ افتتاح ڈپٹی ڈائریکٹر وومن ویلفیئر اینڈ ڈویلپمنٹ سنٹر محترمہ عصمت آفریدی نے کیا۔ افتتاحی کلمات میں انہوں نے کہا کہ ابتدائی طبّی امداد دینے کے طریقے سیکھ کر ہم قیمتی انسانی جانیں بچا سکتے ہیں۔ پروگرام منیجر فرسٹ ایڈ ڈاکٹر آمنہ خان نے ابتدائی طبّی امداد کی اہمیت و افادیت پر روشنی ڈالی۔ ڈاکٹر فاطمہ، ڈاکٹر واصفہ معتصم، محمد ریحان ، محمود صبور نے شرکاءکو فرسٹ ایڈکی عملی تربیت دی۔ ہلال ِاحمر کے طبّی عملہ نے ٹوٹی ہوئی ہڈی کو جوڑنے، زخم کی صفائی، مرہم پٹی،گلے میں کسی شے کے پھنس جانے کے دوران امداد، جل جانے کے بعد امدادی، پانی میں ڈوبے شخص کو بچانے کا طریقہ، بے ہوش ہو جانے والے کو ابتدائی امداد کی فراہمی ، سی پی آر، ہیلپ لائن پر اطلاع دینے کے علاوہ مصنوعی سانس دینے سے متعلق عملی تربیت دی گئی ۔ ہلالِ احمر پاکستان کی جانب سے فرسٹ ایڈ کے عالمی دِن کی مناسبت سے سلائی سنٹر میں تربیتی نشست کا اہتمام کیا گیا۔ اس موقع پر سلائی سنٹر کے علاوہ تین پوزیشن ہولڈر طالبات میں فرسٹ ایڈ باکس بھی تقسیم کیے گئے۔ شرکاءتربیت کی تواضع لنچ سے کی گئی۔ عصمت آفریدی ، ڈاکٹر آمنہ خان نے شرکاءمیں سرٹیفکیٹ تقسیم کیے۔