عالمی برادری روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام رکوائے ،سلطان نعیم کیانی

09 ستمبر 2017

راولپنڈی( نوائے وقت رپورٹ )میانمار کے مسلمانوں پر انسانیت سوز مظالم کے خلاف پاکستان عوامی تحریک نے گزشتہ روز پریس کلب راولپنڈی کے سامنے ایک بھرپور مظاہرہ کیا جس میں سینکڑوں افراد شریک ہوئے ،شرکاءنے ہاتھوں میں کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر احتجاجی نعرے درجتھے ۔خواتین اور بچوں کی بھی ایک بڑی تعداد مظاہرے میںموجود تھی ۔ شرکاءنے لیاقت باغ چوک تک ریلی نکالی جہاں قائدین نے خطابات کیے ۔شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے پاکستان عوامی تحریک کے ضلعی صدر سلطان نعیم کیانی نے کہاکہ میانمار کی روہنگیا مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم پر دنیاءبھر کے عوام چیخ پڑے ہیںمگرامن کی ٹھیکیدار، اقوام متحدہ کی مسلسل خاموشی ناقابل مہم ہے ، ترکی اور مالدیپ کے سوا کسی مسلم ملک نے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا،عراق ،شام ،فلسطین ،افغانستان ،کشمیر اور اب میانمار ہر جگہ خون مسلم کی ارزانی بڑھتی جارہی ہے،مگر 54اسلامی ممالک کی تنظیمOIC اور34 اسلامی ممالک کا فوجی اتحاد جانے کہاں سو رہا ہے ۔ہمارا حکومت پاکستان اور دیگر اسلامی ممالک سے مطالبہ ہے کہ وہ بطور احتجاج میانمار کی سفارتی تعلقات ختم کریں، روہنگیا مسلموں کےلئے فنڈ قائم کریں ان کی جان ومال کے تحفظ کےلئے روڈ میپ ترتیب دیں۔مظاہرے سے پاکستان عوامی تحریک کے راہنماﺅں عذرا اکبر ،منصور قاسم ،علامہ محمود تبسم ،نذیر ہزاروی ، ،ناہیدہ راجپوت ،وسیم خٹک ، قاسم خان اور قاضی مجیب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مشرقی تیمور پر پھرتیاں دکھانے والی اقوام متحدہ کشمیر اور میانمار پر دہرا معیار اپنائے ہوئے ہے ،مزید بے حسی اور خاموشی ظلم کا ساتھ دینے کے مترادف ہو گی ،مسلم ممالک کے عوام برما کے مظلوم مسلمانوں کی مدد کےلئے سڑکوں پر نکلیں اور اپنی اپنی حکومتوں کو مجبور کریں کہ وہ اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل کا اجلاس بلوائیں ،اقوام متحدہ کے بینر تلے امن فوج کو کو برما بھیجا جائے جو روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام رکوائے اور ان کی جان و مال کے تحفظ اور وہاں پائیدار امن کے لئےاقدامات اٹھائے جائیں ۔میانمار کی راہنماءآنگ سان سوچی جو خود ایک خاتون ہیں ان کی پارٹی کی حکومت میںمسلمان خواتین اور بچوں کا قتل عام بھیانک تضاد ہے ،نوبل پرائز دینے والے ان سے یہ ایوارڈ واپس لیں۔