یوم دفاع

09 ستمبر 2017

دنیا میں وہی قومیں اپنا وقار اور وجود بر قرار رکھتی اور زندہ رہتی ہیں جو اپنا دفاع کرنا جانتی ہوں پاکستانی قوم نے 6 ستمبر کی شب غیر اعلانیہ جنگ کا مقابلہ کر کے یہ ثابت کر دیا کہ وہ کسی بھی سازش کا منہ توڑ جواب دینا بہ خوبی جانتی ہے6 ستمبر کی شب ہمسایہ ملک نے رات کی تاریکی میں پاکستان کو نشانہ بنایا تو سرحدوں کے محافط جاگ رہے تھے .دشمن نے 1965 میں پاکستان پر حملہ کر کے یہ سوچ بنالی تھی کہ وہ راتوں رات پاکستان کے اہم علاقوں پر قبضہ کر کے اگلی صبح کا ناشتہ لاہور میں کریں گے مگر انکا یہ خواب پورا نہ ہوسکاپاکستانی افواج اور پاکستانی قوم نے مل کر دشمن کے ہر وار کا مقابلہ کیا .عوام سروں پر کفن باندھ کر دشمن سے بھڑ گے ،عوام نے سب کچھ دفاع وطن کے لیے قربان کر کے ایک بہتریں مثال قائم کی اور دشمن کو اپنے ارادوں میں ناکام کردیاجو ملک پاکستان کو دنیا کے نقشے سے مٹانے آیا تھا وہ ہمیشہ کے لیے اپنے ساتھ ناکامی کا داغ لے گیا .ہمارے ملک دشمن شاید اس بات سے بے خبر ہیں کہ جس قوم کی زمین شہدا کے لہو سے سیراب ہوئی ہو وہ بڑی زرخیز اور شاداب ہوتی ہے اسکی قوم اور افواج اپنی دھرتی کی طرف اٹھنے والی ہر انگلی کو توڑنے اور اسکو دیکھنے والی ہر میلی آنکھ کو پھوڑنے کی صلاحیت رکھتے ہیں .ہم اپنے ملک پر جان وار دیتے ہیں پر آنچ نہیں آنے دیتے قوم کے ان بیٹوں کو سلام پیش کرتی ہوں جو خود قربان ہوجاتے ہیں پر وطن کی عزت پر آنچ نہیں آنے دیتے اور ایسی بہادوری کی مثالیں قائم کرتے ہیں جو دنیا میں کہیں نہیں ملتی ۔( رومیسہ حسین۔کراچی)