شرعی پولیس قبول نہیں،مسلم گروپ پر پابندی لگائی جائیگی:جرمن حکومت

09 ستمبر 2014

برلن(این این آئی) جرمنی میں اعلیٰ حکام نے کہا ہے کہ حکومت مغربی شہر ووپرٹل میں لوگوں کو شراب نوشی سے منع کرنے والے اور خود کو شرعی پولیس کہلوانے والے ایک مسلم گروپ پر پابندی لگانے کی کوشش کریگی۔ جرمنی کے وزیر داخلہ تھامس ڈی مازیری نے ایک اخبار سے گفتگو میں بتایا کہ جرمنی میں شرعی قانون ہرگز برداشت نہیں کیا جائیگا۔ شرعی پولیس قبول نہیں، مسلم گروپ پر پابندی لگائی جائیگی۔ ووپرٹل پولیس نے رواں ہفتہ بتایا تھا کہ نارنجی رنگ کی جیکٹوں میں ملبوس نوجوان مسلمانوں کے ایک گروپ نے شہر کے مختلف حصوں میں گشت کے دوران بار بار لوگوں کو شراب نوشی ترک کرنے اور نائٹ کلبوں میں نہ جانے پر زور دیا۔
اس گروپ کی جیکٹوں کے پیچھے 'شرعی پولیس' چھپا ہوا تھا۔ووپرٹل نارتھ-رہائن ویسٹ فالیا میں واقع ہے اور وہاں کی وزارت داخلہ نے ہفتہ کو ایسی تمام نارنجی جیکٹیں ضبط کرنے کا حکم دیا ہے۔