سیلاب سے 126549 ایکڑ علاقہ متاثر ہوا : شجاع خانزادہ، بلال یاسین

09 ستمبر 2014

لاہور (خصوصی رپورٹر) چیئرمین کیبنٹ کمیٹی برائے فلڈ ریلیف پنجاب، کرنل ریٹائرڈ شجاع خانزادہ نے کہا ہے کہ غیرمعمولی مون سون سسٹم کے سبب جہلم اور چناب کے کیچ منٹ علاقوں میں اونچے درجے کے سیلاب کی صورتحال پیدا کر دی جس سے بڑے پیمانے پر جانی ومالی نقصان کے علاوہ کھڑی فصلوں کو بھی برباد کر ڈالا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب نہ صرف مسلسل صورتحال کا بغور جائزہ لیتے رہے۔ پی ڈی ایم اے سمیت دیگر اداروں کو عملی اقدامات کرنے کے بھی احکامات جاری کرتے رہے۔ کرنل ریٹائرڈ شجاع خانزادہ سول سیکرٹریٹ پنجاب میں میڈیا کو سیلاب اور بارشوں سے متعلق دی جانے والی بریفنگ میں اظہار خیال کر رہے تھے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر بلال یاسین اور حکومت پنجاب کے ترجمان سید زعیم قادری بھی موجود تھے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ سیالکوٹ میں بڑی تباہی پانچ بڑے نالوں میں طغیانی کے سبب ہوئی۔ آج تریموں کے مقام پر پانی کا بہائو آٹھ لاکھ پچاس ہزار کیوسک ہونے کا امکان ہے۔ راوی اور ستلج میں پانی کا بہائو معمول سے زیادہ ہے مگر یہاں کسی قسم کا کوئی خطرہ نہیں ہے۔ صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے بارشوں اور سیلاب کے باعث جاں بحق ہونے والے ہر فرد کے لواحقین کیلئے 16 لاکھ روپے امداد کا اعلان کیا ہے۔ 392 مکانات مکمل طور پر مسمار ہوئے ہیں جبکہ 1166 مکانات کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب تک کے اعدادوشمار کے مطابق ایک لاکھ چھبیس ہزار چھ سو انچاس ایکڑ علاقہ متاثر ہوا ہے۔