بارش، سیلاب کا بہانہ، دکانداروں نے پھلوں سبزیوں کے ریٹ آسمان پر پہنچا دیئے

09 ستمبر 2014

لاہور (کامرس رپورٹر) حالیہ بارشوں اور سیلاب کے بعد بھی صوبائی دارالحکومت کے بیشتر علاقوں میں پرچون سطح پر سبزیوں اور پھلوں کی گراں فروشی کا سلسلہ جاری ہے۔  علامہ اقبال ٹائون، سمن آباد، اچھرہ، مزنگ، ایجوکیشن ٹائون، گلبرگ، شادمان، اندرون شہر سمیت دیگر علاقوں کے مکینوں کے مطابق دکاندار ان کو سبزیاں اور پھل مقررہ قیمتوں سے 40 روپے تک مہنگے فروخت کئے جارہے ہیں۔ مارکیٹ میں ایک کلو آلو کچا چھلکا کی قیمت 60 روپے مقرر ہے لیکن دکاندار 80 روپے میں فروخت کررہے ہیں۔ پیاز 32 کی بجائے 45 روپے، ٹماٹر 42 کی بجائے 65 روپے، لہسن چائنہ 102 کی بجائے 145 روپے، پھلیاں 34 کی بجائے 80 روپے، پالک 28 کی بجائے 35 روپے، بینگن 17 کی بجائے 25 روپے، کریلے 48 کی بجائے 60 روپے، لیموں دیسی 122 کی بجائے 160 روپے، پھول گوبھی 60 کی بجائے 80 روپے، شملہ مرچ 40 کی بجائے 60 روپے، مٹر 130 کی بجائے 150 روپے، بھنڈی 47 روپے کی بجائے 60 روپے، پھلوں میں ایک کلو سیب گاچہ اول 85 روپے کی بجائے 100 روپے، انار دیسی 91 روپے کی بجائے 130 روپے، کیلا اول درجن 66 روپے کی بجائے 80 روپے، آم چونسہ کالا 74 روپے کی بجائے 100 روپے، گرما 53 روپے کی بجائے 65 روپے، انگور سندرخانی 166 روپے کی بجائے 220 روپے، میٹھا درجن 85 روپے کی بجائے 100 روپے، امرود 42 روپے کی بجائے 55 روپے میں فروخت کئے جارہے ہیں۔

نفس کا امتحان

جنسی طور پر ہراساں کرنے کے خلاف خواتین کی مہم ’می ٹو‘ کا آغاز اکتوبر دو ...