عوام نے آزادی اور انقلاب مارچ مسترد کر دئیے: انٹرنیشنل ختم نبوت کانفرنس

09 ستمبر 2014

چنیوٹ(شیخ محمد شہزادہ اکبرسے) انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ کے زیر اہتمام چناب نگر میں انعقاد پذیر ہو نے والی 27ویں سالانہ انٹرنیشنل ختم نبوت کانفرنس تحفظ ختم نبوت کے لئے تجدید عہد، عالم اسلام اور پاکستان کی سلامتی کی دعائوں کے ساتھ اذان فجر کے بعد اختتام پذیر ہو گئی، ہزاروں افراد پر مشتمل قافلے نعرہ تکبیر اللہ اکبر، ختم نبوت زندہ باد، اسلام زندہ باد، کے نعرے بلند کرتے ہوئے اپنے اپنے علاقوں کو واپس روانہ ہو گئے۔ کانفرنس کے اختتامی سیشن کی آخری نشست کی صدارت الشیخ مولانا عبدالحفیظ مکی (مکہ مکرمہ) نے کی۔ کانفرنس کی تیسری نشست بعد نماز عصر وقفہ سوالات و جوابات کی ہو ئی چوتھی نشست بعد نماز مغرب اصلاحی بیان و مجلس ذکر منعقد کی گئی جبکہ اختتامی نشست بعد نماز عشاء ہوئی۔ جس میںانٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ کے امیر مرکزیہ حضرت الشیخ مولانا عبدالحفیظ مکی(مکہ مکرمہ) نے کہا کہ قادیانیوں نے امت مسلمہ کو دھوکہ دیا ہے اکابرین نے پوری زندگی عقیدہ ختم نبوت کیلئے وقف کی۔ انہوں نے کہا کہ ہم میں سے کو ئی بھی پاکستان کے وجود کا دشمن نہیں بلکہ خیر خواہ ہے اور محب وطن ہیں قادیانیوں نے اسلام و ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا، قادیانی آج بھی ملک کو توڑنے کی کوششیں کر رہے ہیں، انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ کے جنرل سیکرٹری مولانا ڈاکٹر احمد علی سراج (کویت) نے خطاب کر تے ہو ئے کہا کہ اسلام میں تشریعی و غیر تشریعی نبوت کا کوئی جواز نہیں قادیانی انگریز سامراج کے ایجنٹ ہیں جنہوں نے ہمیشہ اسلام اور ختم نبوت پر ضرب کاری لگائی ہے۔ قادیانی آئین کے باغی ہیں، الشیخ امجد ثقلاوی (اردن) نے کہا کہ پو ری امت کا اجماعی عقیدہ ہے کہ حضور ﷺ کے بعد قیامت تک کو ئی نبی پیدا نہیں ہو گا۔ قادیانیوں کی پشت پر یہود ہنود ہیں قادیانیت ایک بہت بڑا ناسور ہے جس کا خاتمہ وقت کی ضرورت ہے۔ قادیانی جہاں بھی جائیں گے وہاں پر ان کا تعاقب کیا جائے گا۔ مولانا اشرف علی نے کہا کہ حکومت سے کہتا ہوں جو قانون موجود ہے اس میں اگر ترمیم کی کو شش کی گئی تو یہ ان کو مہنگی پڑے گی۔ پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین حافظ طاہر محمود اشرفی نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ پی ٹی وی پر حملہ کر نا،سیکرٹریٹ پر قبضہ کر نا اور پارلیمنٹ کا محاصرہ کر نا یہ کہاں کا انقلاب یا کو نسی جمہوریت ہے ہم اس ڈبہ بند قادری انقلاب کو مسترد کرتے ہیں۔ عوام نے آزادی و انقلاب مارچ کو مسترد کر دیا ہے،انٹر نیشنل ختم نبوت موومنٹ کے سیکرٹری جنرل صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی نے کہا کہ سات ستمبر مسلمانوں کیلئے خوشی کا دن اور قادیانیوں کے ذلت و رسوائی کا دن ہے ہم کٹ جائیں گے مر جائیں گے لیکن آقا کی ختم نبوت پر آنچ نہیں آنے دیں گے ختم نبوت کے تحفظ کیلئے ہر محاذ پر انشاء اللہ زندگی کے آخری سانس تک لڑتے رہیں گے۔ مولانا حافظ گلزار احمد آزاد نے کہا کہ جہاد اسلام کی روح اور حضور ﷺ کا فرمان ہے جہاد قیامت تک جاری رہے گاقادیانی جذبہ جہاد کو ختم کر نے کیلئے کوشاں ہے۔ ہم امریکہ اور یورپ کو پیغام دینا چاہتے ہیں کہ اب کسی بھی جمہوری انقلاب کی ضرورت نہیںاب صرف محمدی انقلا ب آئے گا، مولاناقاری شبیر احمد عثمانی نے خطاب کر تے ہو ئے کہا ہے کہ ملک میں دہشت گردی کے واقعات اور فرقہ وارانہ اختلافات کے پس پردہ قادیانی ہاتھ ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان اور طاہر القادری ملک کو دیوالیہ کر رہے ہیں ان کے خلاف آئینی دفعات کی رو سے مقدمات درج کئے جائیں،شیخ الحدیث مولانا مفتی محمد طیب نے کہا کہ جہاد اسلام کی روح ہے اور مسلمانوں کی عزت و وقار کا مسئلہ ہے جہاد قیامت تک جا ری رہے گا قادیانیت کی تخلیق کا بنادی مقصد تنسیخ جہاد تھا۔ طاہر عبدالرزاق نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ قادیانی دجل و فریب اور ترغیب و تحریف کے ذریعے مسلمانوں کو دھوکہ دیتے ہیں اور مسلمانوں کو گمراہ کرتے ہیں،انہوں نے کہا کہ قادیانی بلا شبہ عالمی فتنہ ہے یہ ہمارے لئے ایک چیلنج ہے۔ صاحبزادہ محمد قادری نے کہا کہ قادیانیوں کیلئے دو ہی راستے ہیں وہ اسلام قبول کر کے ہمارے بھائی بن جائیں یا وہ اپنی آئینی حیثیت کو تسلیم کر لیں انہوں نے کہا کہ جب تک قادیانی اپنی آئینی حیثیت کو تسلیم نہیں کریں گے ان کے خلاف ہماری جدو جہد جاری رہے گی اور اس پر کسی قسم کی سودے بازی نہیں ہو سکتی چونکہ یہ مسئلہ سیاسی نہیں بلکہ ایمان و عقیدے کا حصہ ہے حکمرانوں کو چاہیئے کہ وہ قادیانیوں کو آئین و قانون کا پابند بنائیں۔نو مسلم مرزا شمس الدین نے کہاکہ قادیانیت یہودی ساختہ اور انگریز پرداختہ گروہ ہے عالمی سطح پر سامراجی و صیہونی قوتوں کی طرف سے ان کی تائید و حمایت بتلاتی ہے کہ فتنہ قادیانیت انگریز کا خود کاشتہ پودا اور یہودیوں کی ذیلی سیاسی تنظیم ہے، انہوں نے کہا کہ یہ ایسا مسئلہ ہے جس پر تمام مسالک کے علماء کرام متحد ہیں۔ نومسلم محمد احمد نے کہا کہ قادیانیت کی سرکوبی ہم سب پر لازم ہے ہم خون کے آخری قطرے تک حضور ﷺ کی عزت و ناموس کی خاطر لڑتے رہیں گے۔مولانا اللہ دتہ شاکر نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ قادیانیوں نے ہندوئوں کی طرح کبھی بھی پاکستان کے وجود کو تسلیم نہیں کیا وہ اب بھی ہندئوں کے اکھنڈ بھارت کے مذہبی عقیدہ پر قائم ہیں۔ مولانا محمد ابراہیم، مولانا غلام یاسین صدیقی، مولانا محمد عبدالوارث نے کہا کہ حکومت پاکستا ن کا اولین فرض ہے کہ ایٹمی توانائی کے شعبے میں گھسے ہو ئے قادیانیوں کو جو پاکستان کو جوہری صلاحیتوں سے محروم کر نے کیلئے گھنائونی سازشوں میں مصروف ہیں تمام عہدوں سے فی الفور ہٹایا جائے اور پاکستان کا دفاع ناقابل تسخیر بنایا جائے۔ شاعر اسلام قاری احسن رضوان نے خصوصی طور پر ختم نبوت کانفرنس میں نعت رسول مقبول ؐ سے سامعین کے دلوں کو حضور ؐ کی محبت سے منور کیا۔ رات کے آخری حصہ میں عالم اسلام کی عظیم روحانی و مذہبی شخصیت مولانا عبدالحفیظ مکی (مکہ مکرمہ)کی رقت آمیز دعا پر کانفرنس کا اختتام ہوا انہوں نے عالم اسلام اور استحکام پاکستان کیلئے خصوصی دعا کروائی۔