این اے 149 کیلئے سیاسی حکمت عملی‘ نوازشریف کی طارق رشید سے خصوصی میٹنگ

09 ستمبر 2014

ملتان (محمد نوید شاہ سے) صدر تحریک انصاف جاوید ہاشمی کی جانب سے حلقہ این اے 149 سے استعفیٰ دینے کے بعد شہر کے حلقہ میں مختلف سیاسی افراد اور گروپوں نے سیاسی سرگرمیوں کو تیز کر دیا ہے۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے ممکنہ شیڈول کے مطابق اکتوبر میں ضمنی الیکشن کی صورت میں سیاسی افراد نے مختلف برادریوں سے ملاقاتوں اور برادریوں سے کارنر میٹنگز شروع کردی ہیں۔ دوسری جانب قائد مسلم لیگ (ن) نے گزشتہ روز شیخ طارق رشید کو بھی اسلام آباد طلب کر لیا تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ میاں نوازشریف نے حلقہ این اے 149 سے متعلق سیاسی حکمت عملی کے حوالے سے ان سے خصوصی میٹنگ کی ہے۔ اس نشست سے ماضی کے ضمنی الیکشن کے کامیاب امیدوار شیخ طارق رشید تھے تاہم عام انتخابات 2013ء میں وہ مخدوم جاوید ہاشمی سے شکست کھا گئے تھے۔ اب مخدوم جاوید ہاشمی کے استعفیٰ کے بعد مسلم لیگ (ن) کی جانب سے ٹکٹ کے حصول کے اہم ترین امیدوار انہی کو تصور کیا جا رہا ہے۔ اسی طرح عام انتخابات میں پی پی پی کے امیدوار ملک عامر ڈوگر تھے جن کا دوبارہ الیکشن میں حصہ لینے کا واضح امکان نظر آرہا ہے۔ گزشتہ کچھ ماہ سے اسی حلقہ میں سید فخر امام بھی خاصے متحرک دکھائی دے رہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کی اعلیٰ قیادت سے انکے بھی مضبوط رابطے استوار ہیں۔ صدر تحریک انصاف مخدوم جاوید ہاشمی نے تاحال اپنی پارٹی چھوڑنے یا نہ چھوڑنے کا کوئی واضح اعلان نہیں کیا اسلئے ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ وہ آزاد حیثیت کے علاوہ کسی بھی پارٹی میں شمولیت کے بعد یا اپنی اس پارٹی میں ہی رہتے ہوئے ٹکٹ کے مضبوط ترین امیدوار تصور ہونگے۔ اسی طرح گیلانی گروپ کے سربراہ اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما سید یزدانی گیلانی نے بھی اسی حلقہ سے الیکشن میں حصہ لینے کیلئے مختلف برادریوں سے ملاقاتیں شروع کردی ہیں۔ اس سلسلہ میں اتوار کے روز اہم ترین پیشرفت اس وقت ہوئی جب وزیراعظم پاکستان میاں نوازشریف نے سابق ایم این اے شیخ طارق رشید کو اچانک اپنے پاس اسلام آباد بلالیا۔ اس بابت گزشتہ روز اسمبلی اجلاس سے قبل دونوں کے درمیان ملاقات بھی ہوئی۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ اسی ملاقات میں ممکنہ ضمنی الیکشن کی صورت میں ٹکٹ کو بھی فائنل کردیا جائیگا۔