آئی ڈی پیز کی بحالی کیلئے 2ارب ڈالر درکار ہیں، عالمی برادری حصہ ڈالے: اسحاق ڈار

09 ستمبر 2014

اسلام آباد (آئی این پی+ نوائے وقت رپورٹ) وفاقی وزیر خزانہ اسحق ڈار نے کہا ہے کہ دہشت گردوں کیخلاف جنگ کے متاثرین کی بحالی و تعمیر نو کیلئے ڈیڑھ سے 2 ارب ڈالر درکار ہیں‘ حکومت نے اس کیلئے 10کروڑ روپے مختص کئے ہیں دیگر ممالک کو بھی چاہئے کہ اس میں حصہ ڈالیں‘ بیرون ملک تعینات پاکستانی ہائی کمشنر اور سفراء سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی ترغیب دیں‘ مسلم لیگ (ن) کی حکومت طاقت کا استعمال کئے بغیر اسلام آباد میں دھرنے کے خاتمے کیلئے کوشاں ہے۔ وہ پیر کو یہاں آسٹریلیا اور برطانیہ کیلئے نامزد کئے گئے ہائی کمشنرز نائیلہ چوہان اور ابن عباس سے ملاقات میں گفتگو کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کی پالیسی میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا فروغ اولین ترجیح ہے۔ آسٹریلوی ایکسپورٹرز نے پاکستان کو ایل این جی کی برآمد میں دلچسپی ظاہر کی ہے اس کا خیرمقدم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت اچھی بھلی ترقی کررہی تھی لیکن حالیہ دھرنوں و احتجاج کی وجہ سے اسے دھچکا پہنچا ہے تاہم جلد ہی ان نقصانات کا ازالہ کرکے ترقی کے سفر کو جاری رکھیں گے، موجودہ حکومت تحمل و برداشت کی پالیسی پر قائم ہے اور ہم عوام کے بنیادی حقوق کا احترام کرتے ہیں، حکومت طاقت کا استعمال کئے بغیر اس احتجاج کو ختم کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ عالمی برادری کیلئے پیغام ہے کہ حالات جلد معمول پر آجائیں گے، ملک کو دوبارہ خوشحالی کی راہ پر گامزن کریں گے۔ پاکستانی سفیروں کو معاشی کامیابیوں کی فہرست بھجوائیں گے۔ آئی ڈی پیز کی دیکھ بھال کیلئے کمیٹی قائم کی جائے گی، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں دیگر ممالک پاکستان کی مدد کریں۔