اسلام آباد ہائیکورٹ نے صنعتوں، سی این جی سٹیشنوں کیلئے گیس پلان طلب کر لیا

09 دسمبر 2014

اسلام آباد (وقائع نگار) اسلام آباد ہائی کورٹ نے ایم ڈی سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ سے صنعتوں اور سی این جی سیکٹر سے متعلق گیس لوڈ مینجمنٹ پلان کی تفصیلات طلب کر لیں،  مزید سماعت 10 دسمبر کو ہو گی۔ پوٹھوہار ریجن کے 314 سی این جی سٹیشن مالکان کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت عدالت عالیہ کے جسٹس اطہر من اللہ نے کی۔ درخواست گزاروں کے وکیل نے فاضل عدالت کو بتایا وزارت پٹرولیم و قدرتی وسائل سی این جی سٹیشن مالکان کے ساتھ غیر قانونی رویہ اختیار کئے ہوئے ہے۔ بجلی گیس کے بلوں کی ادائیگی کے باوجود حکومت نے پوٹھوہار ریجن کے 314 سی این جی سٹیشنوں کے گیس کنکشن منقطع کرنے کی ہدایت کی ہے۔ ان کا کہنا تھا حکومت سی این جی سیکٹر کی گیس صنعتوں کو دے رہی ہے جو درخواست گزاروں کے ساتھ امتیازی سلوک ہے۔ دوسری جانب سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ کے وکلاء نے عدالت کو بتایا کہ طلب اور رسد میں واضح فرق کی وجہ سے صنعتوں اور سی این جی سٹیشنوں کے گیس کنکشن منقطع کئے۔ کمپنی گھریلو صارفین کو ترجیح دے رہی ہے۔